وفاقی کابینہ اجلاس، گھریلو تشدد، عیسائی برادری کی شادی، طلاق سے متعلق بل کی منظوری

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وفاقی کابینہ نے عوامی مفاد کی تجاویز کا جائزہ لیا۔ پہاڑی علاقوں میں شمسی توانائی سے چلنے والی مصنوعات متعارف کرا رہے ہیں۔ کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔ کابینہ نے گھریلو تشدد سے متعلق بل کی بھی منظوری دی ہے۔ وزیراعظم نے ٹرمپ سے ٹیلی فونک گفتگو سے کابینہ کو آگاہ کیا۔

 

تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں 13 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا ہے۔ وفاقی کابینہ نے عوامی مفاد کی تجاویز کا جائزہ لیا۔ وزیراعظم کی ہدایت ہے قابل عمل تجاویز پیش کی جائیں۔ شجرکاری مہم میں پھل دار درخت بھی لگائیں گے۔ پہاڑی علاقوں میں شمسی توانائی سے چلنے والی مصنوعات متعارف کرا رہے ہیں۔

 

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ سیٹزن پورٹل اور وزیراعظم شکایات سیل معلومات شیئر کریں گے۔ بجلی کی چوری کی روک تھام کے لیے ای میٹرز کا استعمال کریں گے۔ بیرونی قرضوں سے متعلق کابینہ کو آگاہ کیا گیا۔ وزیر توانائی نے اپنی وزارت میں 120 ارب روپے کی بچت سے آگاہ کیا۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔ 13.5 بلین ڈالر پر کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ نیچے آیا۔ کابینہ نے عیسائی برادری کی شادی اور طلاق کے اصولی بل کی منظوری دی۔ کم آمدنی والے افراد کے لیے گھروں کی تعمیر کے لیے 5 ارب روپے کی منظوری دی گئی۔ کابینہ نے گھریلو تشدد سے متعلق بل کی بھی منظوری دی ہے۔

 

معاون خصوصی کا مزید کہنا تھا کہ کابینہ نے سی سی ایل سی کے فیصلوں کی بھی توثیق کی ہے۔ این ایچ اے ای بڈننگ اور ای بلنگ کا سسٹم متعارف کرا رہے ہیں۔ فرینڈلی بزنس ماحول پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کاروباری افراد نیب سے ڈر رہے ہیں، سرمایہ کاری نہیں کر رہے۔ وزیراعظم نے ٹرمپ سے ٹیلی فونک گفتگو سے کابینہ کو آگاہ کیا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں