سانحہ ساہیوال کی ابتدائی انکوائری رپورٹ وزیراعظم کو پیش

اسلام آباد (پبلک نیوز) سانحہ ساہیوال پرابتدائی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کردی گئی۔عمران خان کا کہنا ہے کہ ملوث اہلکاروں کےخلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ اپوزیشن نے مطالبہ کیا تو جوڈیشل کمیشن بھی بنا دیا جائےگا۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ ساہیوال کی ابتدائی انکوائری رپورٹ وزیراعظم کو پیش کردی گئی ہے۔ وزیراعظم نے سانحہ ساہیوال پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ملوث اہلکاروں سےرعایت نہیں ہو گی۔ اپوزیشن نے مطالبہ کیا تو تحقیقات کے لیے جوڈیشل کمیشن بھی بنا دیا جائےگا۔

پارلیمانی پارٹی کےاجلاس سےخطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ حکومت متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے۔ پولیس اصلاحات کے لیے ہنگامی اقدامات کر رہے ہیں۔

دوسری جانب پبلک نیوز نے جےآئی ٹی رپورٹ کی تفصیلات حاصل کرلی ہیں۔ جے آئی ٹی رپورٹ 13نکات پر مشتمل ہے۔ پنجاب حکومت 30دن میں مکمل رپورٹ کی فراہمی یقینی بنائے گی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ڈرائیور ذیشان سے متعلق تحقیقات جاری ہیں۔ مقتول خلیل کے ورثا کے لیے 2 کروڑ روپے امدادی پیکج کا اعلان کیا گیا ہے۔ بچوں کومفت تعلیم اور صحت کی سہولت فراہم کی جائے گی۔

رپورٹ کی روشنی میں متعدد سی ٹی ڈی افسران کوعہدوں سےہٹا دیا گیا ہے۔ وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت پنجاب  حکومت کے اقدامات سے مطمئن ہے۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں