پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار نیشنل میڈیسن پالیسی بنانے کا فیصلہ

اسلام آباد(پبلک نیوز) پاکستان میں پہلی بار نشنل میڈیسن پالیسی بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ پہلی نیشنل میڈیسن پالیسی کا اجراءنومبر میں ھوگا۔ معاوں خصوصی ڈاکٹر مرزا کہتے ہیں کہ پالیسی کے اطلاق کے مثبت نتائج مرتب ہوں گے۔ حکومت نے چند ماہ پہلے یہ فیصلہ کیا۔ 

 

تاریخ میں پہلی بار نیشنل میڈیسن پالیسی بنانے کا فیصلہ، پاکستان میں پہلی بار نشنل میڈیسن پالیسی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ادویات کی قیمتوں میں کوالٹی سیفٹی اور دستیابی کے بارے میں تحفظات کو دور کرنے کیلئے نیشنل میڈیسن پالیسی بنائی جا رہی ہے۔ اس حوالے سے معاون خصوصی ڈاکٹر مرزا کا کہنا ہے کہ قومی پالیسی کے اطلاق کے مثبت نتائج مرتب ھوں گے، حکومت نے چند ماہ پہلے یہ فیصلہ کیا، نیشنل میڈیسن پالیسی بنانے کیلئے چار روزہ اجلاس ہوا، جس میں ڈریپ ڈاکٹرز اور مریضوں کی نمائندہ تنظیموں اور چاروں صوبوں سے آفیسرز شریک ہوئے۔

معاون خصوصی ڈاکٹر مرزا کے زیر صدارت اجلاس میں صوبوں کے ہیلتھ کمیشن، پبلک اور پرائیویٹ یونیورسٹی کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں ڈاکٹر ظفر کا کہنا تھا کہ پاکستان کی ایکسپورٹ میں بہت پوٹینشل ہے، حکومت ادویات کی ایکسپورٹ کو بڑھانے کیلئے پر عزم ہے، فارما انڈسٹری میں انقلابی تبدیلیاں دیکھنا چاہتا ھوں۔ نیشنل پالیسی اصلاحات سلسلے کی کڑی ھے جس کا مدت سے انتظار تھا۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں