شہبازشریف کاغیرملکی پراپرٹی بینک اکاؤنٹس کا ریکارڈ پیش کرنے کیلئے شرط

لاہور (شاکر اعوان) شہبازشریف دل کی بات زباں پر لے ہی آئے۔۔جائیدادیں کیسے بنائیں۔ نیب کی تفتیش میں شہبازشریف نے خواہش کا اظہار کردیا۔ ان کا کہنا ہے کہ غیرملکی پراپرٹی بینک اکاﺅنٹس کا ریکارڈ پیش نہیں کر سکتا۔ پہلے لندن جانے دیں۔ پھر دستاویزات پیش کردوں گا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلیٰ پنجاب کے آمدن سے زائد اثاثوں کا معاملہ طوالت اختیار کر گیا۔ شہبازشریف نے غیرملکی پراپرٹی بینک اکاﺅنٹس کا ریکارڈ پیش کرنے سے انکار کر دیا۔ بولے برطانیہ جانے نہیں دیا ریکارڈ کیسے لاتا۔ لندن جانے کی اجازت دیں ریکارڈ لے آﺅں گا۔

نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے پوچھا کہ 2005میں جو فلیٹس خریدے اس کی ہی تفصیل بتا دیں۔ شہبازشریف نے نیب کو صاف کہہ دیا کہ 14سال کا ریکارڈ موجود نہیں۔ ہاں اتنا یاد ہے کہ پراپرٹی فرم لا کے ذریعہ خریدی تھی۔

دوسری جانب وقت گزرنے کے ساتھ بھی ن لیگ کی مشکلیں کم نہ ہوئیں۔ شہباز شریف اور حمزہ شہباز رمضان شوگرملز میں بھی نامزد، ریفرنس منظوری کے لیے نیب ہیڈ کوارٹر بھجوا دیا گیا۔

ریفرنس میں کہا گیا کہ شہبازشریف تحقیقات میں بالکل بھی تعاون نہیں کر رہے ہیں۔ شہبازشریف کے لندن میں 4فلیٹس ہیں جن کی مالیت کروڑوں میں ہے۔

پبلک نیوز ذرائع کے مطابق نیب لاہور نے حمزہ شہباز کے حوالے سے جلد اہم اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں