کوئی غلط فہمی نہ رہے، پی ٹی آئی حکومت ملک سے قرض اتار نہیں رہی: مفتاح اسماعیل

اسلام آباد ( پبلک نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ کوئی غلط فہمی میں نہ رہے، پی ٹی آئی حکومت ملک سے قرض اتاررہی ہے نہ حکومتی اخراجات اور نہ ہی بجٹ خسارہ کم کر رہی ہے بلکہ ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ تیزی سے قرض، حکومتی اخراجات اور بجٹ خسارہ بڑھ رہا ہے۔ پی ٹی آئی حکومت کابجٹ خسارہ 2700 ارب متوقع ہے۔

موجودہ معاشی صورتحال پر ان کا کہنا تھا کہ عمران خان اور اسدعمر کو مسلم لیگ (ن) سے ورثے میں ایک اچھی معیشت ملی تھی لیکن جو معیشت عمران خان اور اسد عمر نے حفیظ شیخ کو دی ہے وہ کہیں زیادہ خراب ہوچکی ہے جس پر مجھے عبدالحفیظ شیخ سے ہمدردی ہے۔ عوام پی ٹی آئی کی نااہلی کی سزا بھگت رہی ہے۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ میں ان لوگوں کی خاطر حقائق بیان کرنا چاہتا ہوں جو شاید یہ اس تاثر سے دھوکہ کھارے ہیں کہ پی ٹی آئی ملک کا قرض اتاررہی ہے یا حکومتی اخراجات کم کررہی ہے یا بجٹ خسارے میں کمی لارہی ہے۔ ان میں سے کچھ بھی پی ٹی آئی حکومت نہیں کررہی بلکہ یہ اُس کا الٹ کررہے ہیں۔ صرف عمران خان اور اسد عمر کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا خسارہ پیدا کیا۔

مفتاح اسماعیل نے واضح کیا کہ مجموعی قومی پیداوار (جی ڈی پی) کا 7.2 فیصد کا خسارہ مسلم لیگ (ن) کے کسی بھی دور کے خسارے سے زیادہ ہے۔ ملکی تاریخ میں اس طرح کے خسارے کی شرح بہت کم پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہاکہ ایک ایسی پارٹی جس نے حکومتی اخراجات میں کمی کو اپنا بنیادی مقصد و ہدف قرار دیاتھا۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں