سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی پارٹی رکنیت سے مستعفیٰ ہو گئے

کراچی(پبلک نیوز) متحدہ پاکستان میں اختلافات، علی رضاعابدی این اے243پر نظرانداز کیے جانے پر دلبرداشتہ، پارٹی کی رکنیت چھوڑ دی، استعفیٰ خالدمقبول صدیقی کو بھجوا دیا۔ ضمنی انتخاب کیلئے کاغذات بھی جمع نہیں کرائے۔

سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی نے حلقہ این اے 243 کے ضمنی انتخاب سے شروع ہونے سے قبل ہی متحدہ قومی مومنٹ ایم کیو ایم پاکستان کی پارٹی رکنیت کو چھوڑ دیا۔ علی رضا عابدی نے کچھ دن پہلے کنوینئر ایم کیو ایم پاکستان خالد مقبول صدیقی کو اپنا استعفی بھجوا دیا، جس کی تصدیق علی رضا عابدی کی ایک ٹوئٹ میں ہو گئی۔

علی رضا عابدی نے اپنی ٹوئٹ میں لکھا کہ ذاتی وجہ سے پارٹی رکنیت چھوڑی ہے۔ علی رضا عابدی نے این اے 243 پر ضمنی انتخاب کے لیے نظرانداز کیے جانے پر دل برداشتہ ہو کر استعفی دیا۔ ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان نے این اے 243 پر علی رضا عابدی کی جگہ فیصل سبزواری کے کاغذات نامزدگی ضمنی انتخاب کے لیے جمع کروائے ہیں۔

سیدعلی رضا عابدی نے پبلک نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن دو ہزار اٹھارہ کے مشکل وقت میں انہیں اس سیٹ سے کھڑا کیا گیا۔ لیکن اب اس حوالے سے کوئی مشاورت نہیں کی گئی۔ ایم کیو ایم رہنما کا کہنا ہے انہوں نے اپنی پارٹی کو بہت وقت دیا۔ تاہم پارٹی نے اب نظر انداز کر دیا۔ ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے استعفےٰ پر کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا۔

عطاء سبحانی  1 سال پہلے

متعلقہ خبریں