وزیرِ اعظم سے خبیر پختونخوا کے گورنر اور وزیرِ اعلیٰ کی ملاقات

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیرِ اعظم عمران خان سے گورنر خبیر پختونخواہ شاہ فرمان اور وزیرِ اعلیٰ محمود خان کی اہم ملاقات، ملاقات میں انضمام شدہ علاقوں میں تعمیر و ترقی کے حوالے سے پیش رفت اور اس سلسلے میں آئندہ کے لائحہ عمل پر غور۔

تفصیلات کے مطابق ملاقات میں وزیرِ مواصلات مراد سعید، معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، معاون خصوصی نعیم الحق بھی موجود تھے۔ وزیرِ اعلی خیبر پختونخواہ نے انضمام شدہ علاقوں میں تعمیر وترقی کے حوالے سے جاری منصوبوں اور خصوصاً صحت انصاف کارڈ کی فراہمی کے حوالے سے پیش رفت سے وزیرِ اعظم کو آگاہ کیا۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ انضمام شدہ علاقوں کی ترقی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ حکومت انضمام شدہ علاقوں میں صحت، تعلیم، امن و امان ودیگر سہولیات کی فراہمی اور عوام کی سماجی و اقتصادی ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے تاکہ ان علاقوں میں عوام کا معیارِ زندگی بہتر بنایا جا سکے اور ان علاقوں کو ملک کے دوسرے حصوں کے برابر لایا جا سکے۔

انھوں نے کہا کہ بجٹ میں بلوچستان کے پس ماندہ مقامات اور انضمام شدہ علاقوں کی تعمیر و ترقی پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔ حکومت کی کوشش ہے کہ بجٹ میں اخراجات میں ممکنہ حد تک کفایت شعاری اختیارکی جائے تاہم پس ماندہ علاقوں کی ترقی اور کمزور طبقوں کی معاونت پر بھرپور توجہ دی جا رہی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ انضمام شدہ علاقوں کی عوام نے ملک کی سلامتی کے لیے بے شمار قربانیاں دی ہیں۔ حکومت کی بھرپور کوشش ہے کہ ان علاقوں کے نوجوانوں کو روزگارکے مواقع فراہم کیے جائیں تاکہ یہ نوجوان اپنی صلاحیتوں کو برؤے کار لا سکیں۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں