گورنر سندھ عمران اسماعیل کا پاکستان کوارٹرز کے معاملے پر اظہار تشویش

کراچی(پبلک نیوز) گورنر سندھ نے عمران اسماعیل نے پاکستان کوارٹرز رہائشیوں کے احتجاج کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے کہا آج چیف جسٹس آف پاکستان سے بات ہوئی ہے ان کی اجازت سے اس معاملے کو وقتی طور پر موخر کیا ہے جس کی میعاد تین ماہ ہے۔

 

گورنر سندھ نے پاکستان کوارٹرز کے معاملے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا آج انتہائی تشویشناک صورتحال تھی۔ چیف جسٹس صاحب سے بات ہوئی ہے، انہوں نے کہا کہ مجھے انسانی جانوں کا خیال ہے۔ چیف جسٹس آف پاکستان کا فی الفورایکشن لینے پر مشکور ہوں۔ وفاقی حکومت کی طرف سے تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے گورنر سندھ کا کہنا تھا حکومت پاکستان نے تہیہ اگر کر لیا ہے کہ انہیں خالی کرانا ہے تو پھر اس کا متبادل کے لئے مکین بھی رائے دیں۔

 

سندھ حکومت نے پاکستان کوارٹرز کے معاملے کا ذمہ دار وفاقی حکومت کو قرار دے دیا۔ سندھ حکومت کے مطابق پاکستان کوارٹرز کی جگہ سندھ حکومت کی نہیں، وفاقی حکومت کی ہے، وفاقی حکومت نے جو ٹاسک فورس بنائی ہے اس پر اتنا سنجیدہ نہ ہوا کریں۔ پاکستان کوارٹرز سے اظہار یکجتی کرنے پہنچے والے ایم کیو ایم رہنماؤں نے ظلم و بربریت کا ذمہ دار سندھ اور وفاقی حکومت کو قرار دے دیا۔

 

دوسری جانب کراچی کا علاقہ گارڈن میں واقع پاکستان کوارٹرز میدان جنگ بن گیا۔ مشتعل مظاہرین کی جانب سے کوارٹرز خالی کروانے پر پرزور احتجاج کیا گیا۔ مشتعل مظاہرین اور پولیس کے مابین بھی شدید جھڑپیں بھی ہوئی۔ پولیس کی جانب سے مشتعل مظاہرین کو منشتر کرنے کیلئے واٹرکینن اور لاٹھی چارج کا بے دریخ استعمال کیا گیا۔ لاٹھی چارج کے دوران کئی مظاہرین شدید زخمی ہوگئے۔ پولیس نے متعدد مظاہرین کو حراست میں لے لیا۔ وزیر اعلی سندھ نے پاکستان کوارٹرز کے مکینوں پر لاٹھی چارج کا نوٹس لے لیا، جائے وقوع سے فوری پولیس واپس بلانے کا حکم دے دیا گیا۔

 

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں