سندھ میں گورنر راج کا امکان نہیں، وزیر اعظم نے کہا تو تعمیل کرینگے: عمران اسماعیل

کراچی (پبلک نیوز) گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ سندھ میں گورنر راج کا کوئی امکان نہیں ہے جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں۔ جناح این ائی سی ایچ اور این ائی سی وی ڈی تینوں وفاق کے ہسپتال ہیں اور وہی چلائے گا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جناح این ائی سی ایچ اور این ائی سی وی ڈی تینوں وفاق کے ہسپتال ہیں اور وہی چلائے گا۔ ان اسپتالوں میں کرپشن کمیشن ہے اور فنڈ پر چلنے والے ادارے میں وزیر کے بھائی کو باسٹھ لاکھ میں رکھا گیا۔ تینوں اسپتال کو بین الااقوامی طرز کا بنائیں گے۔ گھوٹکی میں ٹف ٹائم کیا دیں گے ویسے ہی ٹف ٹائم چل رہا ہے۔

عمران اسماعیل نے مزید کہا کہ قرض پر ملک چل رہا تھا پیسہ تو واپس کرنا ہے۔ لوگوں نے اپنی حکومتیں چلانے کے لیے قرضے لیے۔ نیب ایک ازاد ادارہ ہے جو کاروائی ہورہی ہے وہ خود کررہا ہے۔ نیب وزیر اعظم کے طابع نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ میں گورنر راج کا کوئی امکان نہیں ہے جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں۔ گورنر راج کا امکان نہیں ہے لیکن وزیر اعظم حکم کریں گے تو تعمیل کریں۔ گے۔ سندھ حکومت کو عوام کے لیے کارکردگی کو بہتر بنانا چاہیے۔ حکومت اس اسپتال کی فنانشئیل سرپرستی کرے۔ یہاں کوئی پرچہ نہیں چلتی۔ تینوں اسپتال وفاق کی ملکیت تھے اور وفاق ہی انہیں چلائے گا۔

گورنر سندھ نے کہا کہ وفاقی ٹیکس وفاقی وزیر کے بھائی پر رکھا گیا۔ وی اسٹینڈ جو لیکن اور مس مینیجمینٹ بے انتہا اگر آسکو روکنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو اس اسپتال کو چلانے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ پیپلز پارٹی کو ٹف دینے کی ضرورت نہیں ویسے ہی ٹف ٹائم چل رہا ہے۔ آپ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک سے پیسہ لیتے ہیں اسے صحیح جگہ خرچ نہیں کیا گیا۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان میں بے انتہا قرضہ لیا گیا اور اپنی حکومتیں بچائیں گئیں۔ آنے والی ہماری نسلیں ہیں، ان پر قرضہ چھوڑ کر جانا نہیں چاہتے۔ نیب ایک آزاد ادارہ ہے، وہ وزیر اعظم کے تابع نہیں ہے۔ وہ خود فیصلے کرتا ہے۔گورنر راج کا کوئی امکان نہیں ہے جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں۔ اگر سندھ کے معاملات بہتر نہیں ہوئے اسکے لیے وزیر اعظم جو فیصلہ کریں گے اسے من و ان قبول کرنا ہو گا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں