کام کرو ورنہ گھر جاؤ، گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو فارغ کر دیا گیا

اسلام آباد (پبلک نیوز) کام کرو ورنہ گھر جاؤ، وزیر اعظم عمران خان اپنی پالیسی پر عمل پیرا ہیں۔ اسد عمر کے بعد حکومت کی معاشی ٹیم کا ایک اور کھلاڑی گھر بھیج دیا گیا۔ حکومت کی معاشی ٹیم میں بڑی تبدیلی، گورنراسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو فارغ کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو عہدہ سے ہٹا دیا گیا۔ اس سے قبل وزیر خزانہ اور چیئرمین ایف بی آر کو بھی ہٹایا جا چکا ہے۔ ذرائع کے مطابق چیئرمین ایف بی آر جہانزیب خان کو ریونیو شارٹ فال، ایمنیسٹی اسکیم پر تحفظات اور ایف بی آر میں اصلاحات نہ کرنے پر ہٹایا گیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کئی ماہ سے دونوں عہدہ داروں کی کارکردگی سے ناخوش تھے اور سابق وزیر خزانہ اسد عمر بھی ہٹانے کی سفارش کر چکے تھے اور اسد عمر کے دور میں ہی جہانزیب خان اور طارق باجوہ کو ہٹانے کا اصولی فیصلہ ہو چکا تھا۔

تاہم آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ پیکیج، ریونیو معاملات اور اقتصادی صورتحال کو درپیش چیلنجز کو مد نظر رکھتے ہوئے مشیر خزانہ عبدالحفیظ سے مشاورت کے بعد وزیراعظم نے فوری طور پر یہ بڑا اقدام کیا ہے۔ طارق باجوہ کی مدت ملازمت 2020 میں پوری ہونا تھی۔

ایف بی آر کے نئے چیئرمین کے لیے فضل یزدانی، جاوید غنی، زاہد کھوکھر اور رشید شیخ کے نام زیر غور ہیں۔ ذرائع کے مطابق نئے ناموں پر وزیراعظم سے مشاورت جاری ہے۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں