وفاقی حکومت کا مضر صحت مشروبات کی فروخت روکنے کا فیصلہ

اسلام آباد(پبلک نیوز) وفاقی حکومت کی بچوں کی صحت پر خصوصی توجہ۔ مضر صحت مشروبات کی فروخت روکنے کے لیے ہنگامی اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کر لیا۔ مضر صحت مشروبات میں چینی کی زیادہ مقدار کی وجہ سے بچوں میں غیر معمولی موٹاپا ہونے لگا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے صحت عامر محمود کیانی نے وفاقی اور صوبائی وزرائے تعلیم کو خط لکھا ہے۔ خط میں وزیر صحت نے درخواست کی ہے کہ وزیر صحت نے تعلیمی اداروں کے اندر اور باہر مضر صحت مشروبات کی فروخت پر پابندی لگائی جائے۔ وزیر صحت نے خط کے ذریعہ آگاہ کیا ہے کہ وفاقی حکومت نے مضر صحت مشروبات کی فروخت روکنے کے لیے ہنگامی اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

خط میں وزیر صحت نے لکھا ہے کہ اسکولوں کے باہر سو میٹر کی حدود میں مضر صحت مشروبات فروخت نہ ہونے دئیے جائیں۔ وزارت تعلیم اور فوڈ اتھارٹیز مضر صحت مشروبات کی بچوں تک رسائی نا ممکن بنائے۔ مضر صحت مشروبات سے شوگر اور دیگر بیماریوں میں آضافہ ہو رہا ہے ۔

وزیر صحت کے خط میں لکھا ہے کہ عالمی ادارہ صحت کے مطابق موٹاپا دل کی بیماریوں کینسر اور دیگر بیماریوں کا سبب بن سکتا ہے۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں