مذہب کے نام پر انتہا پسندی،دھرنوں میں ملوث شرپسند عناصرکے خلاف گھیرا تنگ

لاہور(پبلک نیوز) پنجاب میں مذہب کے نام پر انتہا پسندی، توڑ پھوڑ اور دھرنوں میں ملوث شرپسند عناصرکے خلاف گھیرا تنگ کر دیا گیا، پہلے مرحلے میں شرپسند عناصر کے نام واچ لسٹ جبکہ دوسرے مرحلے میں ان شرپسند عناصر کو تحفظ فراہم کرنے والی جماعتوں کو کالعدم قرار دیا جائے گا ۔

 

ملک کے دیگر صوبوں کی طرح پنجاب میں بھی انتہا پسندی، توڑ پھوڑ اور دھرنوں میں ملوث شرپسندعناصر سے آہنی ہاتھوں نمٹنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ پہلے مرحلے میں نام واچنگ لسٹ میں ڈالے جائیں گے اور سرگرمیوں میں تبدیلی نہ آنے کی صورت میں تحفظ فراہم کرنے والی جماعتوں کو کالعدم قرار دیا جائے گا بلکہ ان کے قائدین کو نظر بند بھی کیا جاسکتا ہے۔

 

محکمہ داخلہ پنجاب نے مذہب کے نام پر انتہا پسندی، دھرنے اور توڑ پھوڑ کرنے والے شرپسند عناصر کا ریکارڈ حاصل کرنا شروع کر دیا ہے، جبکہ ان شرپسند عناصر کو تحفظ فراہم کرنے والی مذہبی جماعتوں کے قائدین کے بینک اکاونٹس، ذرائع آمدن اور اثاثہ جات کا ریکارڈ بھی حاصل کیا جارہا ہے۔ حساس اداروں کے ذرائع کے مطابق کچھ جماعتیں مذہب کے نام پر ملک میں انتشار پھیلا رہی ہیں۔ اگر ان کی سرگرمیاں نہ روکی گئیں تو مستقبل میں مزید انتشار پھیلنے کا خطرہ ہے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں