رمضان شوگر مل نالہ بنوانے کے لیے حمزہ شہباز براہ راست ملوث ہیں: نیب

لاہور (پبلک نیوز) رمضان شوگر مل نالہ بنوانے کے لیے حمزہ شہباز براہ راست ملوث ہیں، نیب نے حمزہ شہباز کے خلاف شواہد حاصل کر لیے۔ حمزہ نے شوگر مل ملازمین، مولانا رحمت اللہ کے ذریعے درخواست دلوائی، نیب کے مطابق حمزہ شہباز نے اپنے والد کے ذریعے ٹھیکہ منظور کرایا۔

 

نیب زرائع کے مطابق رمضان شوگر مل نالہ بنوانے کے لیے حمزہ شہباز کے براہ راست ملوث ہونے کے شواہد حاصل کر لیے۔ حمزہ شہباز نے رمضان شوگر مل کے ملازمین اور مولانا رحمت اللہ کے زریعے نالے کی درخواست دلوائی۔ 2015 میں حمزہ شہباز کے پاس 33 فیصد شئیرز تھے اور وہ چیف ایگزیکٹو تھے۔

 

نیب دستاویزات  کے مطابق حمزہ شہباز نے رمضان شوگر مل کے ملازمین اور مولانا رحمت اللہ کے زریعے نالے کی درخواست دلوائی۔ 2015  میں حمزہ شہباز کے پاس 33 فیصد شئیرز تھے اور وہ چیف ایگزیکٹو تھے۔ چیف ایگزیکٹو ہونے کے ناطے حمزہ شہباز تمام معاملات کے زمہ دار تھے۔ بھوانہ نالہ اس وقت بنایا گیا جب حمزہ شہباز ایم اہن اے جبکہ والد وزیراعلی تھے۔

 

نیب زرائع کے مطابق حمزہ شہباز نے رمضان شوگر مل کا فضلہ ٹھکانے لگانے کے لیے قومی خزانے کا استعمال کیا۔ حمزہ شہباز نے اپنے والد کے زریعے ٹھیکہ منظور کروایا۔ چیف ایگزیکٹو ہونے کے ناطے حمزہ شہباز کی زمہ داری تھی کہ وہ فضلے کو ٹھکانے لگانے کے لیے مناسب انتظام کرتے۔

 

نیب  زرائع کا کہنا ہے کہ حمزہ شہباز نیب کی تفتیشی ٹیم کو مطمن نہیں کر سکے۔ حمزہ شہباز نے جواب دیا کہ سیاسی سرگرمیوں کے باعث رمضان شوگر مل کے معاملات سے وہ لاعلم تھے۔ حمزہ شہباز نے جو تحریری بیان جمع کروایا وہ نامناسب اور واضح نہیں تھا۔

 

حارث افضل  4 روز پہلے

متعلقہ خبریں