حمزہ شہباز کا نیب کیسز کی سماعت کرنے والے بنچ پر عدم اعتماد، ضمانت میں غیرمعینہ مدت تک توسیع

لاہور (پبلک نیوز) حمزہ شہباز کا نیب کیسز کی سماعت کرنے والے بنچ پر عدم اعتماد، لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی اور جسٹس سردار احمد نعیم پر مشتمل بنچ نے حمزہ شہباز کی بنچ تبدیل کرنے کی استدعا منظور کرکے کیس کی سماعت نئے بنچ کے روبرو کرنے کے لیے فائل چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کو بھجوا دی۔

 

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی اور جسٹس سردار احمد نعیم پر مشتمل بنچ نے حمزہ شہباز کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی۔ حمزہ شہباز کے وکیل نے مؤقف اختیار کیا کہ رمضان شوگر ملز نالہ تعمیر کیس میں شہباز شریف کی ضمانت منظور ہوچکی ہے۔ پنجاب کابینہ نے علاقے کے لوگوں کی بہتری کے لیے نالے کی تعمیر کی اجازت دی، حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت میں توسیع کی جائے۔

 

نیب پراسیکیوٹر نے دلائل دیئے کہ شہباز شریف نے بیٹے چیف ایگزیکٹو آفیسر رمضان شوگر ملز حمزہ شہباز شریف کو 213 ملین قومی خزانے سے نواز دیے اور نالہ تعمیر کرایا، نیب پراسیکیوٹر  کی جانب سے حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت مسترد کرنے کی استدعا کی گئی۔

 

حمزہ شہباز نے دوران سماعت مؤقف اختیار کیا کہ گرفتاری سے نہیں ڈرتا، بنچ پر تحفظات ہیں، قوم پوچھے گی کہ چیئرمین نیب نے خود بنچ تبدیل کرایا، حمزہ شہباز نے کیس دوسری عدالت میں سماعت کے لیے مقرر کرنے کی استدعا کی، جسے منظور کرتے ہوئے فائل چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کو بھجوا دی اور دوسرے بنچ کی تشکیل تک حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت میں توسیع بھی کر دی گئی ہے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں