ماؤں کا عالمی دن، عظمت کے اعتراف کا دن

جنت نظیر ہے مری ماں، ماں سائبان، ماں انچل، ماں محبت ایثارو مروت صبر و رضا اور وفا، ماں کا کوئی نعم البدل نہیں، ماں منی تے رب منیا، پہلا مرشد ماں، ماں کے رشتے میں کائنات کی خوبصورتی کے سارے رنگ پوشیدہ اور ماں رحمت ہی رحمت ہے۔

 

ماؤں کا عالمی دن، ماں کی عظمت کا اعتراف کا دن، ماں کی عظمت کیسے ہو بیاں، ماں ایسا سایہ دار درخت ہے جس کی گھنی چھاوں کبھی کم نہیں ہوتی اور نہ ہی اس پر کبھی خزاں آتی ہے۔

 

ماں دنیا کا سب سے بڑا مکتب، تہذیب و شائستگی کا گہوارہ اور کائنات کا سب سے پرخلوص اور انمول رشتہ۔ ہے زندگی کی تاریک راہوں میں ماں ہی روشنی کا مینارہ۔ یہ وہ مقدس ہستی ہے جس کے قدموں تلے جنت ہے۔

 

یوں کہیے کہ ماں کا کوئی نعم البدل نہیں، ماں سچے جذبے اور صادق رشتے کا نام ہے۔ جن کی مائیں بچھڑ جاتی ہیں ان کی دنیا اندھیر اور خوشیاں روٹھ جاتی ہیں۔ کہاں سے لائیں وہ ریشم جیسا ملائم لہجہ اور گلاب جیسی باتیں، خلوص بھری باتیں اور اپنوں جیسی شکایتیں اور روح کو جِلا دینے والی حکایتیں۔

 

یادوں کے دریچے، کہاں سے لائیں ٹھنڈیں صبحیں، کڑی دھوپ میں یخ بستہ شامیں۔

 

یہ کامیابیاں عزت یہ نام تم سے ہے

اے مری ماں مرا سارا مقام تم سے ہے!

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں