شہباز شریف کی ضمانت منسوخی کیلئے محنت کرنا ہو گی:عدالت کا وکیل سے مکالمہ

اسلام آباد(پبلک نیوز) آشیانہ ہاؤسنگ سکیم اور رمضان شوگر ملز کیس میں شہباز شریف اور فواد حسن فواد کی ضمانت کا معاملہ، سپریم کورٹ نے نیب سے ملزمان کے خلاف الزامات کی تفصیلات طلب کر لیں۔

 

آشیانہ اور رمضان شوگر ملز کیس میں شہباز شریف اور فواد حسن فواد کی ضمانتوں کے خلاف سپریم کورٹ میں نیب اپیلوں کی سماعت ہوئی۔ نیب وکیل نعیم بخاری، شہباز شریف وکیل اشتر اوصاف اور فواد حسن فواد کی جانب سے اعظم تارڑ بطور وکیل پیش ہوئے۔ ملزموں کے وکلاء کی جانب سے مؤقف اپنایا گیا کہ کچھ اضافی دستاویزات جمع کرانا چاہتے ہیں، جن میں پاور آف اٹارنی اور کچھ اور دستاویزات شامل ہیں، اس کے لیے وقت درکار ہے۔ سماعت آئندہ ہفتے تک ملتوی کی جائے۔

 

جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ ہر ملزم کے خلاف الزامات سے آگاہ کیا جائے، مکمل چارٹ بنا کر عدالت میں پیش کیا جائے۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ عدالت اس کیس میں نوٹس جاری کر چکی ہے۔ استغاثہ کے وکیل نعیم بخاری کو مخاطب کرتے ہوئے جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ 'نعیم بخاری صاحب! آپ کو ضمانت منسوخی کے لیے بہت محنت کرنا ہو گی۔

 

جسٹس عظمت سعید شیخ نے ریمارکس دیئے کہ اس کیس کے 2 معیار ہیں، ایک وہ ہیں، جن کی ضمانت ہو چکی اور ایک وہ جن کی ضمانت نہیں ہوئی، نعیم بخاری کی انتھک کوششوں کے باوجود یہ دونوں معیار ہمارے ذہن میں ہیں۔ سپریم کورٹ نے ہدایت کی کہ 15 مئی کو تمام فریقین تیاری کر کے آئیں، اس کیس کی حساسیت سے آگاہ ہیں، ہم تفصیل سے سنیں گے۔ کیس کی سماعت 15 مئی تک ملتوی کر دی گئی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں