چیف جسٹس ثاقب نثار کی کامیاب انجیو پلاسٹی، حالت خطرے سے باہر

راولپنڈی (پبلک نیوز) چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کو سینے میں تکلیف کے باعث راولپنڈی انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی کر لیا گیا جہاں ان کی کامیاب انجیو پلاسٹی کی گئی۔

تفصیلات کے مطبق چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کو سینے میں تکلیف کے باعث راولپنڈی انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی لیا گیا جہاں ان کی کامیاب انجیو پلاسٹی کی گئی اور ان کے دو اسٹنٹ ڈالے گئے۔

ذرائع کے مطابق ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ ان کی ایک بند شریان کھول دی گئی ہے۔ چیف جسٹس ثاقب نثار کو وارڈ منتقل کر دیا گیا۔ جبکہ چیف جسٹس ثاقب نثار کو کل اسپتال سے ڈسچارج کر دیا جائے گا۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے ڈاکٹروں کے مشورے پر ہلکی غذا کا استعمال شروع کر دیا ہے۔ وہ اہلخانہ سے گفتگو بھی کررہے ہیں جبکہ چیف جسٹس کو کیتھ لیب سے وارڈ منتقل کر دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اسپتال کی سکیورٹی سخت کر دی گئی ہے۔ اسپتال میں چیف جسٹس کی عیادت کے لیے آنے والوں  کا سلسلہ جاری ہے جسٹس آصف سعید کھوسہ، اور شرعی عدالت کے چیف جسٹس شیخ نجم الحسن نے اسپتال میں چیف جسٹس کی عیادت کی۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں