شریف فیملی کیلئے برطانیہ سے لاکھوں ڈالرز کی منتقلی، پبلک نیوز نے کھوج لگا لی

لاہور(شاکر محمود اعوان) پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنماء اور قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف پر غیر ملکی اخبار نے منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ پبلک نیوز نے کھوج لگا لی۔ برطانوی اخبار نے دعوی کیا کہ شریف فیملی کے لیے برطانیہ سے آفتاب محمود نے لاکھوں ڈالرز پاکستان منتقل کیے۔

 

تفصیلات کے مطابق شہباز شریف فیملی کے لیے منی لانڈرنگ کے لیے سہولت کار آفتاب محمود کا کچھا چٹھا پبلک نیوز نے نکال لیا۔ نیب ذرائع کے مطابق آفتاب محمود برطانیہ میں عثمان انٹرنیشنل منی ایکسچینج کے ذریعے رقوم پاکستان منتقل کرتا تھا اور اس نے 2008 سے 2009 میں 21 لاکھ 76 ہزار امریکن ڈالرز شریف فیملی کو منتقل کیے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ رقم نصرت شہباز، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کو منتقل ہوئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ برطانیہ سے بے نامی ٹرانزیکشن کے ذریعے پہلے رقم پاکستان منتقل ہوئی اور پاکستان رقم منتقل ہونے کے بعد پھر یہ رقم شریف فیملی کے اکاونٹس میں منتقل کردی گئی۔ 2008 سے 2009 کے دوران لاکھوں ڈالرز پر مشتمل 21 ٹرانزیکشن شریف فیملیز کے اکاونٹ میں کی گئیں۔ ان 21 ٹرانزیکشن کے ذریعے 15 کڑور 23 لاکھ روپے نصرت شہباز، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کو منتقل ہوئے۔


واضح رہے کہ کالے دھن کو سفید کرنے کے لیے برطانیہ کی منی ایکسچینج عثمان انٹرنیشنل کو استعمال کیا گیا۔ عثمان انٹرنیشنل منی ایکسچینج شریف فیملی کے ذاتی ملازم کے نام پر بنائی گئی۔ غیر ملکی رقوم کی منتقلی میں شاہد شفیق، اشفاق احمد ،آفتاب محمود اور ایاز محمود بطور فرنٹ مین اپنی خدمات سر انجام دیتے رہے ہیں۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں