پاکستان ریلوے کو خسارہ کی بڑی وجہ افسروں کے سینکڑوں غیر ملکی دورے

اسلام آباد (پبلک نیوز) ریلوے اپنا خسارہ کم کرنے کے لیے اپنی زمینیں فروخت کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے لیکن گزشتہ پانچ سالوں میں خسارے میں چلنے والی ریلوے کے افسران نے کروڑوں روپے خرچ کرکے   تین سو اکہتر غیر ملکی دورے کئے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت جہاں ریلوے کے خسارے کو کم کرنے کے لیے ریلوے کے اثاثے بیچ رہی ہے وہیں ریلوے افسروں نے مشینری دیکھنے اور ٹریننگ کے بہانے سینکڑوں غیر ملکی دورے کئے۔ خسارے کا شکار ریلوے کے افسران کے گذشتہ پانچ سالوں میں غیر ملکی دوروں کی تفصیلات پبلک نیوز نے حاصل کر لی۔ دستاویزات کے مطابق خسارے میں چلنے والے ریلوے افسران نے پانچ سالوں میں 371 غیر ملکی دورے کیے۔

دستاویزات کے مطابق گذشتہ پانچ سالوں میں بیرون ملک مشینری دیکھنے کے لیے 266 غیر ملکی دورے ریلوے افسران نے کیے۔ ٹریننگ ورکشاپوں میں شرکت کرنے کے لیے ریلوے افسران نے پانچ سالوں میں 105غیر ملکی دورے کیے۔ ریلوے افسران نے سرکاری خرچ پر چین، ترکی، برطانیہ، امریکہ سمیت مختلف ممالک کے دورے کیے۔ ریلوے افسران نے دو ہزار تیرہ میں51، سال دو ہزار چودہ میں34 اور دو ہزار پندرہ میں45 غیرملکی دورے کیے۔ سال دو ہزار سولہ میں 109، سال دو ہزار سترہ میں90 اور دو ہزار اٹھارہ میں 41 غیر ملکی دورے ریلوے افسران نے کیے۔

کروڑوں روپے غیر ملکی دوروں پر خرچ کرنے کے باوجود ریلوے اب بھی نہ صرف خسارے میں چل رہی ہے بلکہ ریلوے کی زمینوں کو بیچ کر ریلوے کو خسارے سے نکالنے کی تیاریاں بھی کی جا رہی ہیں۔

حارث افضل  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں