لاہور میں شوہر کا دوستوں کے سامنے رقص نہ کرنے پر بیوی پر تشدد

لاہور(رمضان بیگ) کاہنہ ڈیفنس میں خاتون پر شوہر اور اس کے دوستوں کا بہیمانہ تشدد اور اس کے سر کے بال بھی کاٹ دیئے۔ پولیس نے مقدمہ تو درج کیا مگر 354 کی دفعات شامل نہیں کی گئیں۔

 

تفصیلات کے مطابق کاہنہ کی رہائشی خاتون نے چار سال قبل پسند کی شادی کی تھی، شادی کے بعد اکثر میاں بیوی میں جھگڑا رہتا تھا۔ خاتون نے الزام لگایا ہے کہ شوہر نے دوستو کے سامنے اسے ڈانس کرنے کو کہا اور انکار کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا اس کے سر کے بال کاٹ دیئے۔ شوہر اور اسکے دوستو نے پائپو سے تشدد کیا اور سر کے بال بھی کاٹ دیئے۔ خاتون کو زخمی حالت میں مقامی ہسپتال داخل کرایا گیا ہے۔

پولیس کی جانب سے درج ہونے والی ایف آئی آر میں 354 اے کی دفعات شامل نہیں کی گئی۔ افسران نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ایس پی سے رپورٹ طلب کر لی۔ چار سال قبل خاتون نے اپنے شوہر کے ساتھ پسند کی شادی کی تھی اور کہا کہ شوہر سے بھاگ کر پولیس تھانے پہنچی جہاں مقدمہ درج کروا دیا گیا ہے، خاتون نے کہا کہ پولیس نے معمولی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا، جس کے فائدہ ملزم کو پہنچے گا۔

 

دوسری جانب وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے واقعے کا نوٹس لے لیا ہے۔ شہریار آفریدی نے آئی جی پولیس پنجاب کو ملزم کے خلاف فوری ایکشن اور معاملے کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کی ہدایت کی اور واقعہ کی فوری رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں