اسلام آباد ہائی کورٹ: نااہلی کیس میں آصف زرداری سے 2ہفتے میں جواب طلب

اسلاآباد(پبلک نیوز) اسلام آباد ہائی کورٹ میں آصف زرداری کی نااہلی کیس کی سماعت،عدالت نے 2 ہفتے میں جواب طلب کر لیا۔ چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیئے کہ پارلیمنٹ متعلقہ فورم ہے۔ اس کے پاس خود احتسابی کا نظام کیوں نہیں؟ ایف بی آر بھی حکومتی ادارہ ہے۔ درخواست گزار وہاں چلے جائیں۔

 

سابق صدر آصف زرداری کو نااہلی کیس میں نوٹس جاری، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار تحریک انصاف کے رہنماء عثمان ڈار پیش ہوئے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ اس معاملے پر پارلیمنٹ کی خصوصی کمیٹی بھی تشکیل دی جاسکتی ہے۔ کمیٹی بننے دیں پھر عدالت سے رجوع کریں۔ 18 ہزار کیسز زیر التواء ہیں۔ درخواست گزار جو وقت ادھر لیں گے وہ سائلین کے لیے چھوڑ دیں۔

 

عثمان ڈار کے وکیل کا کہنا تھا کہ آئین کے آرٹیکل 199 کے تحت عدالت سے رجوع کیا۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا آپ کی جماعت سے آصف علی زرداری کے مقابل امیدوار نے رجوع کیا؟ وکیل بولے انہیں معلوم نہیں، چیف جسٹس نے کہا کہ معلوم کرنا بہت ضروری ہے۔ عدالت نے آصف علی زرداری سے جواب طلب کرتے ہوئے درخواست گزار کے وکیل سے عدالت کو مطمئن کرنے کے لیے دلائل طلب کر لیے۔ سماعت 2 ہفتوں بعد دوبارہ ہو گی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں