زراعت کو مستحکم کرنا ترجیحات میں شامل ہے: وزیر اعظم عمران خان

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیر اعظم عمران خان سے ملتان ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ممبران قومی اسمبلی نے ملاقات کی۔ ملاقات میں وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی، سید فخر امام، ظہور حسین قریشی، احمد حسین ڈاہر، ملک محمد عامر ڈوگر، مخدوم زین حسین قریشی، محمد ابراہیم خان، میاں محمد شفیق، طاہر اقبال اور اورنگ زیب خان کھچی شریک تھے۔

 

ملتان ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ممبران قومی اسمبلی نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی۔ ممبران اسمبلی نے حکومت کی صحت، تعلیم، غربت کے خاتمے اور کم آمدن افراد کے لیے گھروں کی تعمیر کے منصوبوں اور مختلف دیگر شعبوں کے لیے کی جانے والی اصلاحات کو سراہا۔

 

ممبران نے زرعی شعبے میں ٹیوب ویل کے لیے بجلی کے نرخوں میں کمی، ٹریکٹر کی قیمت میں کمی جیسے اقدامات سے کسانوں کے لیے فی ایکٹر پیداواری لاگت میں 2500 سے 3 ہزار روپے کمی آئی ہے جس سے کاشتکاروں کی حوصلہ افزائی ہوئی ہے۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ممبران اسمبلی اپنے حلقوں میں ہسپتالوں کا دورہ کریں تاکہ سرکاری ہسپتالوں سے علاج کرانے والوں کو میعاری سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے۔ زراعت کے شعبے کو مستحکم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ حکومت زراعت کے شعبے میں جدت اور فی ایکڑ پیداوار بڑھانے کے لیے کاشتکاروں کو ہر ممکنہ مدد فراہم کرے گی۔ عوامی فلاح وبہبود کے لیے ایسا بلدیاتی نظام لا رہے ہیں جس میں بلدیاتی نمائندے با اختیار اور براہ راست عوام کو جوابدہ ہوں گے۔

 

ممبران قومی اسمبلی نے وزیرِ اعظم کو انتظامیہ کے حوالے سے عوام  کی شکایات سے آگاہ کیا۔ گیس اور بجلی کے حوالے سے عوام کو درپیش مسائل پر بھی گفتگو کی گئی۔

 

وزیرِ اعظم کا کہنا تھا کہ گیس بلوں کے حوالے سے موصول شدہ شکایات کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔ تحقیقات کی روشنی میں ذمہ داران کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔ وزیرِ اعظم نے منتخب نمائندگان کو ہدایت کی کہ وہ عوام کے مسائل کو اجاگر کرنے اور ان کے حل کے سلسلے میں متحرک کردار ادا کریں۔

حارث افضل  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں