پراگون سٹی اسکینڈل: خواجہ سعد رفیق کیخلاف تحقیقات میں اہم پیش رفت

لاہور(شاکر محمود اعوان) پراگون سٹی اسکینڈل خواجہ سعد رفیق کی کرپشن کی ایک اور عجب کہانی منظرعام پر آگئی، خواجہ سعد رفیق، ندیم ضیا اور قیصر امین بٹ سے متاثرہ ایک اور شخص منظرعام پر آگیا۔

 

خواجہ سعد رفیق کے مظالم اور کرپشن کی ایک اور داستان سامنے آگئی۔ پراگون سوسائٹی کے عقب میں موجود لاہور گرین سٹی کے حاجی رفیق بھی متاثرہ افراد میں شامل ہیں۔ حاجی رفیق کا نیب کے روبرو قلمبند کروایا گیا بیان پبلکب نیوز نے حاصل کر لیا ہے۔ تحریری بیان میں حاجی رفیق نے دعوای کءا کہ میری 200 کنال زمین پر خواجہ سعد رفیق، ندیم ضیا اور قیصر امین بٹ نے زبردستی قبضہ کیا، 2005 میں میری 200 کنال کی زمین زبردستی پراگون سوسائٹی میں شامل کر لی گئی۔ حاجی رفیق کے بیان کے مطابق پراگون میں شامل کی گئی، 200 کنال زمین کی رجسٹری آج بھی میرے نام ہے۔

 

حاجی رفیق نے تحریری بیان میں مؤقف اختیار کیا کہ 2003ء میں شاہد بٹ سے ملکر 1 ہزار کنال سوسائٹی بنانے کی غرض سے خریدی، میری ملکیتی زمین پر پراگون سوسائٹی نے مکانات تعمیر کر کے فروخت کر دئیے ہیں، خواجہ سعد رفیق اور ندیم ضیاء سے معاہدہ ہوا تھا کہ زمین کا تبادلہ ہو گا، جس کے تحت 175 کنال مجھے ملنا تھی اور 300 کنال زمین خواجہ سعد اور ندیم ضیا کو دینی تھی۔ حاجی رفیق نے بتایا کہ معاہدے کے مطابق سعد رفیق اور ندیم ضیاء باقی زمین کی مارکیٹ ریٹ کے مطابق قمیت ادا کریں گے۔ حاجی رفیق نے الزام لگایا کہ خواجہ سعد رفیق اور ندیم ضیاء نے معاہدے کی پاسداری نہیں کی اور میری زمین ہتیا لی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں