پیراگون سٹی فراڈ کیس : خواجہ سلمان رفیق کے خلاف تحقیقات میں اہم پیش رفت

لاہور(شاکر محمود اعوان) پبلک نیوز نے پیراگون سٹی فراڈ کیس میں گرفتار خواجہ سعد رفیق کے بعد خواجہ سلمان رفیق کی پیراگون سے گٹھ جوڑ کی تفصیلات حاصل کرلیں۔ سلمان رفیق کروڑوں روپے مالیت کے 2 کنال پر محیط 10 پلاٹوں کے بھی مالک ہیں۔

 

مشہور مقولہ ہے، بڑے میاں تو بڑے میاں چھوٹے میاں سبحان اللہ، خواجہ برادران نے پراگون سٹی میں کروڑوں کا بزنس جبکہ اربوں کی جائیداد بنائی۔ پبلک نیوز کو موصول ہونے والی دستاویزات کے مطابق خواجہ سلمان رفیق نے پراگون سٹی میں ایگزیگٹو بلڈرز کے 260 گھر فروخت کیے، جس پر کروڑوں روپے کمشن کے طور پر وصول کیے۔ نیب زرائع کے مطابق خواجہ سلمان رفیق نے نیب کو فراہم کیجانے والی دستاویزات کے مطابق 1 بھی گھر ایسا نہیں ہے جسکی مکمل معلومات فراہم کی گئی ہوں۔

 

خواجہ سلمان رفیق نے 2014 سے 2018 تک 260 گھروں کو کے ایس آر ایسوسی ایٹ کے زریعے فروخت کیا۔ دستاویزات کے مطابق خواجہ سلمان رفیق کے نام پر پراگون سٹی کے ایگزیکٹو بلاک میں 2 کنال کے 10 پلاٹس ہیں اور ایک پلاٹ کی مالیت 3 کروڑ روپے تک ہے۔ خواجہ سلمان رفیق نے نیب کی تفتیشی ٹیم کے روبرو موقف اختیار کیا کہ انکے بڑے بھائی خواجہ سعد رفیق کیجانب سے انہیں 12 کنال پر مشتمل پلاٹس گفٹ کے طور پر دیے گیے۔

دستاویزات کے مطابق خواجہ سلمان رفیق نے 2014 میں 47 گھر فروخت کیے جس پر 60 لاکھ سے زائد کمشن وصول کیا۔ 2015 میں 38 گھر فوخت کیے جس پر 34 لاکھ سے زائد کمشن وصول کیے۔ 2016 میں 40 گھر فروخت ہوئے جس پر 82 لاکھ سے زائد کا کمشن وصول کیا۔

2017ء میں 53گھر فروخت ہوئے جس پر 1 کروڑ سے زائد کا کمشن جبکہ 2018 میں 67 گھر فروخت ہوئے اور اس پر 1 کروڑ 24 لاکھ کمشن وصول کیا گیا۔ خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق 15 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کی حراست میں ہے۔ دونوں بھائیوں کو 5جنوری کو احتساب عدالت میں دوبارا پیش کیا جائے گا۔

عطاء سبحانی  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں