ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماءعلی رضا عابدی کے قتل کی تحقیقات میں اہم پیش رفت

کراچی(پبلک نیوز) ایم کیو ایم رہنماءعلی رضا عابدی کے قتل کی تحقیقات میں اہم پیش رفت، پولیس نےفائرنگ کرنے والے ملزم کی شناخت کرلی، سی ٹی ڈی نے مفرور ملزمان سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کر دی ہے۔

 

‎ایم کیو ایم کے رہنماء علی رضا عابدی کے قتل کی تحقیقات میں اہم موڑ، پولیس نے علی رضا عابدی پر فائرنگ کرنے والے ملزم کی شناخت حاصل کرلی ہے،‎عدالت نے مفرورملزمان حسنین، بلال، غلام مصطفی عرف کالی چرن اور فیضان کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کر دیئے۔ سی ٹی ڈی نے مفرور ملزمان سے متعلق رپورٹ پیش کر دی ہے، سی ٹی ڈی کے مطابق 17سالہ مفرور ملزم بلال نے علی رضا عابدی پر فائرنگ کی، جبکہ بلال کی تصاویر بھی حاصل کرلی گئیں ہیں۔

 

عدالت نے گرفتار ملزمان کو مقدمہ کی نقول فراہم کر دی اور حکم دیا ہے کہ مفرور ملزمان کو آئندہ سماعت پر گرفتار کرکے پیش کیا جائے، پولیس کا کہنا ہے کہ مفرور ملزمان روپوش ہیں، جلد گرفتار کیا جائے گا، پولیس نے بتایا ہے کہ قتل کے لئے حسينی بلڈنگ کے پاس نامعلوم شخص نے ملزمان کو 8 لاکھ روپے دیے، جبکہ علی رضا عابدی کے قتل ميں استعمال ہونے والی موٹر سائیکل جلا دی گئی ہے۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں