فواد حسن فواد کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں اہم پیش رفت

لاہور (شاکر اعوان) نواز شریف کے پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد 6 لاکھ کے اثاثوں سے کیسے اربوں روپے کے اثاثوں کے مالک بنے۔ پبلک نیوز نے کھوج لگا لیا۔ فواد حسن فواد حکومت اور جہانگیر صدیقی گروپ کے ساتھ بیک وقت کام کرتے رہے۔

 

نیب ذرائع کے مطابق فواد حسن فواد نے پنجاب پبلک سروس کمیشن جوائن کیا تو اثاثوں کی مالیت 26 لاکھ 68 ہزار تھی۔ فوادحسن فواد نے 4 ارب 56 کروڑ 51 لاکھ 26 ہزار 904 روپے کے ذاتی اخراجات کیے۔ روالپنڈی میں موجود 15 منزلہ لگژری شاپنگ مال، حیدر روڈ پلاٹ اور قرضہ جات پر سود شامل ہیں۔ نیب دستاویزات میں فواد حسن فواد نے جہانگیر صدیقی گروپ کے بنک سے 3 ارب 45 کروڑ کا قرض ظاہر کیا ہے، جبکہ فواد حسن فواد حکومت پنجاب اور جہانگیر صدیقی گروپ کے ساتھ بیک وقت کام کرتے رہے۔

 

فواد حسن فواد نے 2006ء میں جہانگیر صدیقی گروپ کو جوائن بطور سینئر گروپ ایڈویزر کیا اور ماہانہ 6 لاکھ 65 ہزار تنخواہ وصول کرتے رہے اور جہانگیر صدیقی گروپ سے سالانہ 1 کروڑ روپے کا بونس بھی حاصل کرتے رہے۔ فواد حسن فواد نیب کے روبرو 3 ارب 47 کروڑ 54، لاکھ 80 ہزار 822روپے کی وضاحت دے سکے جبکہ1 ارب 8 کروڑ 96 لاکھ 46 ہزار 172 روپے سے متعلق مطمن نہیں کر پائے۔2017ء میں فواد حسن فواد کے اثاثوں کی مالیت 4کروڑ 80 لاکھ 34 ہزار 485 روپے تھی اور اثاثوں سے زائدان کے اوپر واجب الادا آداگیاں 5 کروڑ ظاہر کی گئیں تھیں۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں