حکومت کی چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی سربراہی کیلئے اہم پیش رفت

اسلام آباد(پبلک نیوز) چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے معاملے پر بڑی پیشرفت، حکومت مان گئی۔ اہم ترین کمیٹی کی سربراہی کے لئے اپوزیشن جماعتوں مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی میں جنگ چھڑ گئی۔ بلاول اور خواجہ آصف بھی دوڑ میں شامل ہو گئے۔

 

قومی اسمبلی کو وجود پائے تین ماہ ہونے کو آئے لیکن پبلک اکاؤنٹس کمیٹی قائم نہ ہوسکی۔ حکومت اور اپوزیشن کی کھینچا تانی میں قائمہ کمیٹیوں کا معاملہ ٹھپ ہی رہا۔ اب برف پگھلتی نظر آرہی ہے۔ حکومت نے ہتھیار ڈال کر اپوزیشن کی صفوں میں کھلبلی مچا دی ہے۔ چیئرمین اپوزیشن سے بنانے پر رضا مند ہو گئی۔

 

حکومت سے چیئرمین پی اے سی کا عہدہ حاصل کرنے کے لئے بظاہر اکھٹی مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے درمیان ہی عہدے کے لئے جنگ چھڑ گئی۔ پیپلزپارٹی چیئرمین پی اے سی کے معاملے میں مسلم لیگ ن کے ساتھ تھی لیکن حکومت کی جانب سے معاملے میں بطور امیدوار بلاؤل بھٹو کے ذکر سے پیپلزپارٹی کی پوزیشن میں بھی تبدیلی۔

 

حکومت کا شہباز شریف کے حوالے سے فیصلہ اب بھی برقرار ہے۔ حکومت شبہاز شریف کو چیئرمین پی اے سی نہیں دیکھنا چاہتی۔ متبادل کے طور پر نام دینے کی پیشکش بھی کر دی ہے۔ خواجہ آصف بھی دوڑ میں شامل۔ آئندہ ہفتے مزید پیشرفت کا امکان ہے۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں