نیب کی خواجہ سعد رفیق کیخلاف اربوں روپے کرپشن کیس میں اہم پیش رفت

لاہور(شاکر محمود اعوان) نیب نے ریلوے میں 55 لوکو موٹیو کی مہنگے داموں خریداری کیس میں خواجہ سعد رفیق کیخلاف مزید شواہد حاصل کر لیے۔ خواجہ سعد پر الزام ہے کہ انہوں نے 55 لوکوموٹیو 26ارب چالیس کڑوڑ کے خریدے جبکہ انکی قیمت ہمسایہ ملک میں 13 ارب 29 کڑوڑ ہے۔

 

پاکستان ریلوے میں انکلاب برپا کرنے کے دعویدار کیخلاف اربوں روپے کرپشن کی شکایات پر نیب لاہور نے کمر کس لی۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کیخلاف 55 لوکو موٹیوز کی مہنگی خریداری اور کرپشن کیخلاف تحقیقات کو انکوائری میں تبدیل کرنے کے لیے چیئرمین نیب سے اجازت طلب کر لی گئی ہے۔

 

نیب ذرائع کے مطابق خواجہ سعد رفیق پر قومی خزانے پر 21 ارب 60 کڑوڑ روپے نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔ خواجہ سعد رفیق نے اپنی وزرات کے دوران 55 لوکوموٹیوز 26 ارب 40 کڑوڑ میں خریدنے کی منظوری دی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وفاقی وزیر نے چائنہ سے 1 لوکوموٹیو 48 کڑوڑ خریدا جبکہ ہمسایہ ملک میں وہی 24 کڑور کا ہے۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ لوکو موٹیوز کی مہنگی خریداری میں ریلوے کے دوافسران بھی ملوث ہیں۔

 

پاکستان ریلوے کے ذرائع مطابق 55 لوکو موٹیوز میں سے صرف 10 استعمال میں جبکہ باقی فالتو ہیں، جبکہ45 لوکو موٹیو پڑے پڑے خراب ہونے کا خدشہ پیدا ہو چکا ہے اور اضافی لوکو موٹیوز خریدنے سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان ہوا۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں