کاہنہ ڈیفنس: خاتون پر تشدد کیس کی تفتیش میں اہم انکشافات سامنے آگئے

لاہور(مرزارمضان بیگ) خاتون پر تشدد کیس میں اہم انکشافات سامنے آ گئے۔ پولیس کی تفتیش میں میاں بیوی آئس کے نشے کے عادی نکلے۔ ماڈل ٹاؤن کچہری میں بیوی پر بدترین تشدد کرنے والے ملزمان میاں فیصل اور اسکے دوست راشد کو چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

 

کاہنہ ڈیفنس میں خاتون اسماء پر تشدد میں اہم انکشافات سامنے آگئے، پولیس نے متاثرہ خاتون کا بیان ریکارڈ کر لیا، جس میں ملزم میاں فیصل نے پولیس کو بیان دیا کہ وہ آئس کے نشے کے عادی تھے۔ وقوعہ کے روز دونوں آئس کے نشے میں مبتلا تھے۔ نشے میں پتہ نہیں چلا کہ کب اسماء پر تشدد کیا اور بال کاٹے، میرا اکثر بیوی کے ساتھ جھگڑا رہتا تھا۔

متعلقہ خبر:لاہور میں شوہر کا دوستوں کے سامنے رقص نہ کرنے پر بیوی پر تشدد

دوسری طرف ملزم کو جوڈیشل مجسٹریٹ شاہد ضیاء کی عدالت میں جسمانی ریمانڈ کے حصول کے لیے پیش کر دیا گیا۔ ملزم میاں فیصل نے اپنی بیوی اسماء عزیز کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا، ملزم نے دوستوں کے سامنے ڈانس نہ کرنے پر بیہمانہ تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد سر کے بال کاٹ ڈالے تھے۔ ملزم کیخلاف تھانہ کاہنہ پولیس نے مقدمہ درج کیا تھا۔ ملزم کے خلاف اسکی متاثرہ بیوی کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا تھا، جس پر عدالت نے چار روزہ جسمانی ریمانڈ دیتے ہوئے پولیس کے حوالے کر دیا۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں