جنون میں مبتلا بھارت نے سفارتی آداب کو پس پشت ڈال دیا

اسلام آباد(خالد محمود خالد) جنگی انتہا پسندوں کے ہاتھوں یرغمال مودی حکومت نے ایک بار پھر سفارتی آداب کی دھجیاں اڑا دیں، بھارت میں پاکستانی سفارتی عملے اور ان کے اہل خانہ کو تنگ کرنے اور بدتمیزی کے واقعات کے بعد سفارت کار کو گرفتار کر لیا گیا۔

 

نئی دہلی میں پاکستانی سفارتی اہلکار کو ہراساں کیے جانے کی تفصیلات پبلک ہو گئیں۔ پاکستانی سفارت کاروں کو ہراساں کرنے کی بھونڈی سازش بھارتی خفیہ ایجنسی "را" کی تھی۔ پاکستانی ہائی کمیشن کے افسر معمول کی شاپنگ پر مارکیٹ گئے۔ بازار میں موجود خاتون نے پاکستانی آفیسر سے بدکلامی کی اور پہلے سے طے شدہ منصوبے کے مطابق فوراً پولیس پہنچی اور سفارت کار کو تھانے لے گئی، جہاں انہیں کئی گھنٹے حبس بے جا میں رکھا گیا اور زبردستی دو کاغذات پر دستخط بھی کرائے گئے۔

پاکستان حکام کی جانب سے معاملہ بھارتی وزارت خارجہ کے سامنے اُٹھانے پر پاکستانی اہلکار کو چھوڑ دیا گیا۔ پاکستان نے اس معاملے پر بھارت سے شدید احتجاج کیا ہے۔ سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارتی اقدام ویانا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی ہے اور پاکستان بھارت کی اس حرکت کا جواب دینے کا حق رکھتا ہے۔

عطاء سبحانی  3 روز پہلے

متعلقہ خبریں