بھارتی ریاست میں مسلمانوں کے سوا اقلیتی مہاجرین کو شہریت دینے کا بل منظور

 

پبلک نیوز: بھارت میں مسلمانوں کی تعداد کیوں بڑھنے لگی؟ مودی سرکار کا بغض کھل کر سامنے آ گیا۔ آسام میں مسلمانوں کے علاوہ تمام اقلیتی مہاجرین کو شہریت دینے کا بل منظور کرلیا۔

 

بھارت میں نریندر مودی کی حکومت مسلمانوں کے خلاف کھل کر سامنےآگئی۔ ریاست آسام کی لوک سبھا نے مسلمانوں کےعلاہ تمام اقلیتی مہاجرین کو شہریت دینے کا بل منظور کرلیا۔

 

شمال مشرقی ریاست آسام کی لوک سبھا نے پاکستان، بنگلہ دیش اور افغانستان سے غیر قانونی طور پر آنے والے ہندو، سکھ، پارسی اور دیگر اقلیتی مذہبی گروہ سے تعلق رکھنے والے مہاجرین کو شہریت دینے کا بل اتفاق رائے سے منظور کیا۔

 

بل کی منظوری کے خلاف آسام میں بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ شہریت سے متعلق ترمیمی بل 2019 راجیہ سبھا منظوری کے لیے بھیجا جائے گا۔ منظوری کی صورت میں نئی ترمیم فوری طور پر نافذ العمل ہوگی۔

حارث افضل  6 روز پہلے

متعلقہ خبریں