بھارت کا پاکستان کے بعد دنیا کو سرپرائز دینے کا خواب چکنا چور

پبلک نیوز: دنیا کو سرپرائز دینے کا بھارتی خواب چکنا چور، 27 مارچ کو جس اینٹی سیٹلائٹ ویپن تجربے کا مودی جی نے اپنے تئیں سرپرائز دیا وہ کوئی راز نہیں تھا بلکہ امریکہ اپنے جاسوس طیاروں سے پہلے ہی بھارتی سرگرمیوں پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ بھانڈہ پھوٹ جانے پر بھارتی حکام الٹی سیدھی ہانکنے لگے۔

27 مارچ کو بھارت کے ایکسپائر وزیراعظم نریندر مودی نے پہلے تو ٹویٹر پر قوم سے خطاب میں سرپرائز دینے کا اعلان کر کے کروڑوں بھارتیوں کو طویل انتظار کروایا۔ اور پھر جب خطاب ہوا تو پتہ چلا کہ کھودا پہاڑ اور نکلی چوہیا۔

بھارتی وزیراعظم نے اینٹی سیٹلائٹ ویپن تجربے کو بہت بڑی کامیابی اور سرپرائز قرار دیا لیکن اب پتہ چلا ہے کہ جس امریکہ کو بھارت سرکار آج کل اپنا سب سے اچھا دوست سمجھتی ہے وہی اپنے جاسوس طیاروں سے اس پر نظر رکھے ہوئے تھا اس تجربے سے آگاہ تھا۔

بحر ہند میں واقع ڈئیگو گارشیا کے اڈے سے اڑان بھرنے والا امریکہ کا آر سی 135 جاسوس طیارہ بھارت کی سرگرمیوں کا پتہ چلا چکا تھا۔ یہ طیارہ خلیج بنگال پر کافی دیر پرواز کرتا رہا۔ آر سی 135 سے ملنے والی رئیل ٹائم انٹیلی جنس سے امریکہ اس تجربے سے آگاہ تھا۔

پینٹاگون کے حوالے پریس ٹرسٹ آف انڈیا نے دعوی کیا ہے کہ امریکہ ہرگز بھارت کی جاسوسی نہیں کرتا جبکہ امریکی ائیر سپیس کمانڈ کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل ڈیوڈ ڈی تھامسن نے سینٹ کی آرمز سروسز سب کمیٹی کو بتایا ہے کہ بھارت کی طرف سے تجربے والے علاقے میں فضائی حدود کی بندش سے پتہ چل چکا تھا کہ کیا ہونے والا ہے۔

جنرل تھامسن کے مطابق امریکہ میزائل ڈیفنس وارننگ سسٹم کو میزائل فائر ہوتے ہی پتہ چل گیا تھا، امریکہ نے اینٹی سیٹلائٹ میزائل پر فائرنگ سے ہٹنگ تک مکمل نظر رکھی ہوئی تھی۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں