کرتارپور بارڈر کھلنے سے دوطرفہ مذاکرات کا آغاز نہیں ہو گا: بھارت

نئی دہلی(پبلک نیوز) کرتار پور راہداری پر پاکستان کی پذیرائی بھارت کو ایک آنکھ نہ بھائی، امن دشمن بی جے پی نے سارک کانفرنس میں شرکت کی دعوت مسترد کر دی، بھارتی وزیرخارجہ سشما سوراج نے کہا کرتارپور بارڈر کھلنے سے دوطرفہ مذاکرات کا آغاز نہیں ہو گا۔

 

کرتارپور راہداری کھولے جانے کے پُر مسرت موقع پر بھی بھارت ہٹ دھرمی سے باز نہ آیا۔ بھارتی وزیرِخارجہ سشما سوراج نے سرد مہری کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا کہ راہداری کا مطلب یہ نہیں کہ دو طرفہ مذاکرات شروع ہو جائے۔ ساتھ ہی پاکستان کی جانب سے کی گئی پہل کو بھی یہ کہہ کر ہائی جیک کرنے کی کوشش کی کہ کرتارپورراہداری کے بھارتی حکومت کے دیرینہ مطالبے پر پاکستان نے اب مثبت ردعمل دیا ہے۔

 

سشما سوراج نے سارک کانفرنس میں بھارتی وزیرِ اعظم کی شرکت کی خبروں کی تر دید کرتے ہوئے کہا وزیراعظم نریندر مودی سارک کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے۔ قبل از وقت پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سشمان سوراج کو کرتار پور راہداری کی سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں شرکت کی دعوت دی تھی، لیکن انہوں نے اس سے انکار کر دیا اور کہا کہ بھارت کے دو وزراء شریک ہوں گے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں