کراچی: گیس لوڈ شیڈنگ سے تنگ صنعت کاروں کا پیر سے فیکٹریاں بند کرنیکا اعلان

کراچی(پبلک نیوز) سندھ میں آئے روز کی گیس بندش سے تنگ آکرصنعت کاروں نے منگل کو گورنرہاوس کے سامنے احتجاج کا اعلان کر دیا۔ سائٹ ایسوسی ایشن کے صدر کا کہنا ہے کہ اتوارتک صورتحال واضح نہ ہوئی تو انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور ہو جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق گیس بحران سے عاجز کراچی کے تاجروں نے بڑا فیصلہ کر لیا ہے۔ سائٹ ایسوسی ایشن نے پیر سے فیکٹریاں بند کرنے کا اعلان کر ڈالا۔

سائٹ ایسوسی ایشن کے صدر سلیم پاریکھ کا کہنا تھا کہ سوئی سدرن نے ایسی صورتحال پیدا کر دی ہے کہ انڈسٹری بند کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔ یومیہ ڈھائی ارب روپے کا نقصان ہو رہا ہے۔ اگرسوئی گیس کمپنی نے گیس اتوار کو گیس بحال نہ کی تو پیر سے فیکٹریاں بند، منگل کو گورنر ہاؤس سامنے احتجاج کریں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ملک کے سب سے بڑے شہر کی حالت یہ ہے کہ نئے پاکستان میں کراچی کے شہری لکڑی خریدنے اور سلنڈراستعمال کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔

چئیرمین ہوزری مینوفیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن جاوید بلوانی نے کہا کہ گیس پریشرمیں کمی سے ٹیکسٹائل انڈسٹری میں بحرانی کیفیت ہے۔ یہی صورتحال رہی تو ایکسپورٹرز بڑے خسارے کی وجہ سے اپنی انڈسٹریز کو بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے۔ سوئی سدرن گیس کمپنی کی غیرمؤثر گیس منیجمنٹ کی وجہ سے انڈسٹری کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں