ذاتی معالج کا نواز شریف کو قید تنہائی میں رکھنے کا بیان سراسر جھوٹ ہے: فیاض الحسن چوہان

لاہور (پبلک نیوز) پنجاب وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ ذاتی معالج کا نواز شریف کو قید تنہائی میں رکھنے کا بیان سراسر جھوٹ ہے۔ چاروں میڈیکل بورڈز کے مطابق نواز شریف کو شوگر ، بلڈپریشر اور گردے میں معمولی پتھری  کے علاوہ کوئی بڑا مرض لاحق نہیں۔

نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کے ٹویٹ کے جواب میں وزیر اطلاعات و ثقافت پنجاب فیاض الحسن چوہان نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے 5 جنوری سے لے کر 2 فروری تک نواز شریف کے چار میڈیکل بورڈ بنائے۔ چاروں میڈیکل بورڈز کے مطابق نواز شریف کو شوگر ، بلڈپریشر اور گردے میں معمولی پتھری  کے علاوہ کوئی بڑا مرض لاحق نہیں۔

انھوں نے کہا کہ آخری میڈیکل بورڈ نے انہیں دل اور سینے کے مرض کے علاج کے لیے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں چیک اپ تجویز کیا تھا۔ لیکن نواز شریف اور آل شریف کی ضد پر نواز شریف کو واپس جیل منتقل کیا گیا۔

فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے ذاتی معا لج ڈاکٹر عدنان کا یہ کہنا کہ انہیں قید تنہائی میں رکھا گیا ہے سراسر جھوٹ اور لغو ہے۔ اگر آل شریف اور نواز شریف چاہتے ہیں تو ہم انہیں پچیس تیس قیدیوں کے ہمراہ بیرک  میں رکھ لیتے ہیں تاکہ ان کی قید تنہائی کا شکوہ دور ہوجائے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں