سانحہ ساہیوال پر بننے والی جے آئی ٹی کی ابتدائی رپورٹ منظر عام پر آگئی

لاہور(پبلک نیوز) سانحہ ساہیوال کی جے آئی ٹی کی ابتدائی رپورٹ تیار، گاڑیوں کے مالکان عظیم لیاقت اور ثاقب شہزاد سے بھی تفتیش کر لی گئی۔ خلیل اور ذیشان کے گھر والوں نے جائے وقوعہ سے ملنے والی 2 گولیاں اور 4 خول حوالے کیے۔

 

سانحہ ساہیوال پر بننے والی جے آئی ٹی کی ابتدائی رپورٹ تیار کر لی گئی، رپورٹ کے مطابق جے آئی ٹی نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا، مقامی اور متاثرہ افراد سے ملاقات اور سوال جواب کیے۔ خلیل اور ذیشان کے گھر والوں نے جائے وقوعہ سے ملنے والی 2 گولیاں اور 4 خول حوالے کیے۔ چیئرمین پیمرا، ڈی ایچ کیو ساہیوال، ٹال پلازہ سے فوٹیجز حاصل کرنے کیلئے مراسلے لکھے۔

جے آئی ٹی میں بتایا گیاکہ گاڑیاں، ہتھیار، خول، خون آلود کپڑے، ذیشان اور خلیل کے موبائل فونز فورینزک ایجنسی بھجوائے۔ خود کش جیکٹس، سی ٹی ڈی اور ہسپتال کی ڈی وی آر اور گولیوں کے سکے بھی فورینزک ایجنسی بھجوائے۔ گاڑیوں کے مالکان عظیم لیاقت اور ثاقب شہزاد سے بھی تفتیش کر لی گئی۔ سوشل میڈیا سے فوٹیجز ڈائون لوڈ کیں، وائرلیس کنٹرول ساہیوال کا ریکارڈ قبضے میں لیا۔

 

وہاڑی میں شادی کی تصدیق کروائی اور جائے وقوعہ کی پنجاب فورینزک سائنس ایجنسی سے سرچ کروائی۔ صفدر حسین، احسن خان، رمضان، سید اللہ، حسنین اور ناصر اقبال کو گرفتار کیا گیا۔ سانحہ ساہیوال کی جے آئی ٹی کو فورینزک سائنس ایجنسی نے 15 رپورٹس فراہم کر دی ہیں۔ جے آئی ٹی نے پنجاب فورینزک سائنس ایجنسی کو 19 اشیاء کی جانچ کی درخواست کی۔

گولیوں کے خول، سکوں، ہتھیاروں، ذیشان اور خلیل کے موبائل فونز کی رپورٹ جے آئی ٹی کو موصول ہو گئیں، سی ٹی ڈی اور مقتول خاندان کی گاڑیوں کی فورینزک رپورٹ بھی جے آئی ٹی کو موصول۔ سی ٹی ڈی ساہیوال اور پیمرا فوٹیجز کی فورینزک رپورٹس بھی تیار۔

 

رپورٹ کے مطابق ٹال پلازہ پتوکی، اوکاڑہ اور سوشل میڈیا کی ویڈیوز کی فورینزک رپورٹ بھی جے آئی ٹی کو موصول۔ 4پارسلز میں مقتولین کے خون آلود کپڑوں کی رپورٹس تاحال جے آئی ٹی کو موصول نہیں ہو سکیں۔ 2 پرائما کارڈز اور 8 ہینڈ گرنیڈز کی رپورٹس بھی تاحال مکمل نہ ہو سکیں۔19 رپورٹس مکمل کر کے جے آئی ٹی تفتیش مکمل کی جائے گی۔

عطاء سبحانی  6 ماه پہلے

متعلقہ خبریں