ننھے احسن کا قتل: پولیس مقابلے کا ڈرامہ رچایا گیا، گرفتار اہلکاروں کا انکشاف

کراچی (پبلک نیوز) کسی کی جان گئی آپ کی ادا ٹھہری۔ سچل کے علاقے میں پولیس مقابلے میں کمسن احسن کی ہلاکت کی گتھیاں سلجھنے لگیں۔ وقوعہ سے ملنے والا نائن ایم ایم کا خول پولیس اسلحہ سے میچ کر گیا۔

تحقیقات کے لیے چاروں اہلکاروں کے ہتھیار فرانزک کے لیے بھجوائے گئے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دو اہلکاروں میں تلخ کلامی کے بعد فائرنگ ہوئی اور زد میں آ کر 19ماہ کا احسن زندگی کی بازی ہار گیا۔

تفصیلات کے مطابق صفورا گوٹھ کے قریب پولیس فائرنگ سے کمسن احسن کی ہلاکت کامعاملہ، گتھیاں سلجھنے لگیں۔ گرفتارپولیس اہلکاروں نے سب کچھ اگل دیا۔ انھوں نے اقرار کیا کہ اس دن نہ تو کوئی پولیس مقابلہ ہوا اور نہ ہی کسی ملزم سے آمنا سامنا ہوا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ واقعہ سچل پولیس کے اہلکاروں کی اسنیپ چیکنگ کے دوران پیش آیا۔ عبدالصمد اور امجد علی نامی پولیس اہلکاروں میں تلخ کلامی کے بعد فائرنگ ہو گئی اور بے رحم گولی رکشہ میں سوار نو ماہ کے احسن کو جا لگی۔

گرفتار چاروں اہلکاروں کا ریکارڈ طلب کر لیا گیا۔ تفتیشی ٹیم نے رپورٹ اعلیٰ حکام کو دینے کے لیے تحقیقات شروع کر دیں۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں