کراچی:  ٹھاٹھیں مارتاپانی ہاکس بے کی سڑکوں تک آگیا

کراچی (پبلک نیوز) کیار تو ابھی تک نہیں آیا لیکن اثرات کراچی تک پہنچ گئے۔ بحیرہ عرب میں سمندری طوفان کے باعث کراچی کے ساحل پر طلاطم برپا ہے۔ سپرسائیکلون کی وجہ سے ٹھاٹھیں مارتاپانی ہاکس بے کی سڑکوں تک آگیا۔

 

سمندری طوفان کیار نے اپنا رنگ دکھانا شروع کر دیا۔ سپرسائیکلون کی وجہ سے ٹھاٹھیں مارتا پانی ہاکس بے کی سڑکوں تک آگیا۔ سمندری پانی نے ابراہیم حیدری، ریڑھی گوٹھ، لٹھ بستی، چشمہ گوٹھ سمیت متعدد علاقوں کو متاثر کیا ہے۔ 200 سے زائد گھر زیر آب آچکے ہیں۔ وزیراطلاعات سندھ، وزیر کچی آبادی مرتضیٰ بلوچ اور ڈسٹرکٹ کونسل چیئرمین سلمان مراد نے متاثرہ بستیوں کا دورہ کیا اور متاثرین کو ہنگامی بنیادوں پر منتقل کرنے کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ وزیراطلاعات کہتے ہیں سندھ حکومت ہر قسم کے حالات کا مقابلہ کرنے کو تیار ہے۔

 

طوفان کے باعث سمندر کنارے واقع گالف کلب بھی متاثر ہوا ہے۔ ڈی جی میٹ کہتے ہیں اسی طرح کا طوفان 2007 میں بھی آچکا ہے حالیہ طوفان سے ساحلی پٹی کونقصان پہنچنے کا کوئی خطرہ نہیں۔

 

میٹ آفس کے مطابق بحیرہ عرب کی تاریخ کا طاقتور ترین طوفان کیا رکیٹگریز میں تبدیل ہو کر شمال مغرب کی جانب بڑھ رہا ہے۔ اس کا رخ اومان کی جانب سے اور یہ کراچی ساڑھے سات سوکلومیٹر دورہے۔ سمندری طوفان کی کے دوران 265 سے 230 کلومیٹر کی رفتار سے گرد آلود ہوائیں چلنے کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں