مقبوضہ کشمیر میں کرفیو 73 واں روز، بھارتی فوج کی فائرنگ، 3 کشمیری شہید

 

سری نگر (پبلک نیوز) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی درندگی انتہا کو چھونے لگی۔ وادی میں کرفیو اور لاک ڈاؤن کا مسلسل 73 واں روز، قابض فوج نے اننت ناگ میں مزید 3 کشمیریوں کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔

 

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 73 واں روز، جبری پابندیاں برقرار، بھارتی فوج کے مظالم کی انتہا ہو گئی۔ قابض فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کی آڑ میں ضلع اننت ناگ میں تین کشمیریوں کو گولیاں مار کر شہید کر دیا۔

 

وادی میں کشمیریوں پر پہلے ہی عرصہ حیات تنگ ہے۔ جگہ جگہ بھارتی فوجی تعینات ہیں۔ بیماروں کو ہسپتال منتقل کرنے میں مشکلات درپیش ہیں۔ دوائیں تک دستیاب نہیں۔ کئی مریض ہسپتالوں میں تڑپنے پر مجبور ہیں۔ وادی میں خوراک اور پانی کی بھی شدید قلت ہے۔

 

دکانیں اور کاروباری مراکز بند، ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر، سکول و کالج بھی مسلسل بند ہیں۔ ہزاروں افراد جیلوں میں قید ہیں لیکن مودی سرکار ہے کہ ظلم کرنے سے باز نہیں آ رہی۔

 

ادھر وادی میں بھارتی ظلم و جبر، مہینوں پر محیط جاری لاک ڈاؤن اور مکمل تاریکی کے ماحول میں مظلوم کشمیریوں نے مزاحمت کے اظہار کا نیا راستہ اختیار کرتے ہوئے سیبوں پر بھارت مخالف اور پاکستان کے حق میں نعرے لکھ کر بھارت بھیج دیئے، جس نے ملک میں ہلچل مچا دی ہے۔

 

تاجروں کو حالیہ موصول ہونیوالے سیبوں پر جو نعرے لکھے تھے ان میں ہم کیا چاہتے آزادی، میری جان عمران خان، پاکستان زندہ باد، میں برہان وانی سے محبت کرتا ہوں، موسیٰ واپس آجاؤ شامل ہیں۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں