دنیا بھر میں کشمیری آج بھارت کے یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منا رہے ہیں

پبلک نیوز: دنیا بھر میں کشمیری آج بھارت کا یوم جمہوریہ یوم سیاہ کے طور پر منا رہے ہیں۔ سرحد کے دونوں اطراف احتجاج ہوگا۔ مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال ہے۔ کٹھ پتلی انتظامیہ نے احتجاج کو دبانے کیلئے غیراعلانیہ کرفیو نافذ کردیا ہے۔ انٹرنیٹ اورموبائل سروس بند ہے۔ سری نگر میں 2کشمیریوں کو شہید کر دیا گیا۔

تفصیالت کے مطابق دنیا بھرمیں مقیم کشمیری آج  بھارت کا یوم جمہوریہ یوم سیاہ کے طور پر منا رہے ہیں۔ یوم سیاہ منانے کا مقصد بھارت کی طرف سے کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دینے سے مسلسل انکار کے خلاف احتجاج ریکارڈ کروانا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق یوم سیاہ منانے کی کال سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے دی۔

حریت قیادت کا کہنا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں یوم جمہوریہ منانے کا حق نہیں رکھتا کیونکہ اس نے جموں وکشمیر پر کشمیریوں کی مرضی کے خلاف قبضہ جما رکھا ہے۔

دنیا بھرمیں مقیم کشمیری بھارت مخالف مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔ کٹھ پتلی انتظامیہ نے بھارتی یوم جمہوریہ کے موقع پر پورے مقبوضہ وادی کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا گیا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں