قصور کے ہائی سکول میں طالبات کو کتابوں کے بجائے اینٹیں لانے کا حکم

قصور (پبلک نیوز) شہر میں میلاد گیٹ کے قریب واقع ایم سی ماڈل ہائی سکول میں تعلیم حاصل کرنا وبال جان بن گیا۔ سکول میں بنیادی سہولتوں کے لیے مختلف بہانوں سے کبھی وائیٹ واش اور کبھی برف وغیرہ کے نام پر بچوں سے فنڈ وصول کیا جاتا رہا ہے۔

جس کی وجہ سے بچوں کے والدین بلبلا اٹھے۔ اسکول کی ہیڈ معلمہ نے انوکھا حکم نامہ جاری کرتے ہوئے کہا کہ واش روم بنانے کے لیے فی بچہ پانچ اینٹیں لائے یا اس کے برابر نقدی دے۔

میڈیا کی ٹیم نے جب طالبات کے بستے چیک کیے تو طالبات کے بستوں اور بستوں میں ایٹیں موجود تھیں۔ اس موقع پر سکیورٹی گارڈ نے میڈیا ٹیم سے کیمرہ چھیننے کی کوشش بھی کی۔

احمد علی کیف  6 ماه پہلے

متعلقہ خبریں