نیب کو میرے خلاف ثبوت نہ ملا تو قیصر امین بٹ کو گرفتار کر لیا: خواجہ سعد رفیق

اسلام آباد (پبلک نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ نیب کی جانب سے تشدد کیا جاتا ہے۔ قوت مدافعت توڑنے کے لیے ممنوعہ ادویات دی جاتی ہیں۔

سابق وزیرِ ریلوے  نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں نیب پر الزامات عائد کرتے ہوئے کہا کہ نیب کی جانب سے تشدد کیا جاتا ہے۔ قوت مدافعت توڑنے کے لیے ممنوعہ ادویات دی جاتی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ نیب کو ان کے خلاف ثبوت نہ ملا تو قیصر امین بٹ کو گرفتار کر لیا گیا۔

واضح رہے کہ خواجہ سعد رفیق کے حالیہ الزامات سے قبل شہباز شریف سمیت مختلف ن لیگی قائدین نیب کو ہدفِ تنقید بناتے رہے ہیں۔ جامعہ پنجاب  کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹرمجاہد کامران نے بھی نیب پر تنقید کی۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں