پاکستان عمران خان کے ہاتھوں میں غیر محفوظ ہے: خواجہ سعد رفیق

لاہور(شاکر محمود اعوان) لاہور کی احتساب عدالت نے پیراگون سٹی کیس میں گرفتار خواجہ برادرن کے جوڈیشیل ریمانڈ میں توسیع کر دی، خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے کا مطلب ہے کہ یہ عوام کو مزید رلائیں گے، ہم اربوں ڈالر چھوڑ کر گئے تھے سمجھ نہیں آتا وہ کہاں گئے۔

 

سابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی سلمان رفیق کو جیل حکام نے جوڈیشیل ریمانڈ ختم ہونے پر احتساب عدالت میں پیش کیا، ایڈمن جج کی رخصت کے باعث ڈیوٹی جج نے سماعت کی، عدالت نے استفسار کیا کہ تفتیش کہاں تک پہنچی ہے، نیب پراسیکوٹر نے بتایا کہ خواجہ برادرن کے خلاف ریفرنس سکروٹنی کے مراحل میں ہے۔

 

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر خواجہ برادرن کے جوڈیشل ریمانڈ میں 18اپریل تک توسیع کردی۔ عدالتی کارروائی کے بعد خواجہ سعد رفیق نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وزیر خزانہ خود کہہ رہے ہیں کہ ملک دیوالیہ ہونے جا رہا ہے۔ اسد عمر کو غیر ذمہ دارانہ بیان پر مستعفی ہونا چاہیے۔ آئی ایم ایف کے پاس جانے کا مطلب ہے کہ یہ عوام کو مزید رلائیں گے، ہم اربوں ڈالر چھوڑ کر گئے تھے سمجھ نہیں آتا وہ کہاں گئے۔

 

سعد رفیق کی ایک بار پھر حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان عمران خان کے ہاتھوں میں غیر محفوظ ہے، ہم اربوں ڈالر چھوڑ کر گئے تھے۔ سمجھ نہیں آتی وہ کہاں گئے۔ سلمان رفیق نے کہا سرکاری اسپتالوں میں ادویات کی شدید قلت ہے۔ حکومت کی پالیسی ناکام ہو چکی ہے۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں