عبد العلیم خان کے اخراجات پر تحقیقات ہونی چاہئیں: خورشید شاہ

لاہور(شعیب ہاشمی) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماء خورشید شاہ نے کہا ہے کہ علیم خان کی گرفتاری دکھاوا ہے۔ عبد العلیم خان جس کا اے ٹی ایم اے ہے اس کو بھی شامل تفتیش کیا جانا چاہیئے۔ فیض آباد دھرنے کے فیصلے کو پارلیمینٹ میں لانے کا عندیہ دے دیا۔

 

پیپلز پارٹی پنجاب کے پارلیمانی لیڈر سید حسن مرتضٰی کی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سید خورشید شاہ نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بلاول کے ڈرائی کلین کی صاف نظر آرہا ہے کہ عبد العلیم خان کو بیلنس کرنے کے لیے گرفتار کیا گیا۔ تحقیقات ہوئیں تو عمران خان کی کیوں نہیں؟ علیم خان کے اخراجات پر تحقیقات ہونی چاہیئے۔

 

پیپلز پارٹی نے مطالبہ کیا ہے کہ وزیر اعظم اور حکومتی اتحادی واضع کریں کہ این ار او کس نے مانگا اور ڈیل کس کے ساتھ ہو رہی۔ خورشید شاہ نے نیب قوانین میں ترامیم کی تائید بھی کر دی۔ خورشید شاہ نے فیض آباد دھرنے کے فیصلے کو پارلیمینٹ میں لانے کا عندیہ دے دیا۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں