مالی سال 20-2019: کے پی کے کا 750 ارب روپے مالیت کا بجٹ آج پیش ہو گا

پشاور(پبلک نیوز) کے پی کے کا مالیت کا بجٹ آج پیش ہوگا،2 کھرب 9 ارب روپے کا سالانہ ترقیاتی پروگرام بجٹ میں شامل ہے، وفاق کی طرز پر صوبائی کابینہ کے ارکان کی تنخواہوں میں 10 فی صد کٹوتی کی تجویز ہے، جبکہ قبائلی اضلاع کے لئے 163 ارب روپے مختص کئے جائیں گے۔

 

مالی سال 2019-20 کے لئے کے پی کا 750 ارب روپے مالیت سے زائد حجم کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا، بجٹ میں وفاقی طرز پرصوبائی کابینہ کے ارکان کی تنخواہوں میں 10 فیصد کٹوتی کی تجویز دی گئی ہے، قبائلی اضلاع کے لئے 163 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز ہے، گریڈ 17 سے 19 تک ملازمین کی تنخواہوں میں 5 فیصد اضافے کی تجویز ہے، تعلیم کے شعبے کے لئے 162 ارب مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ قبائلی اضلاع کے 163 ارب روپے کے بجٹ میں 83 ارب روپے ترقیاتی کاموں کے لیے مختص کرنے کی تجویز ہے۔

بجلی منافع اور بقایاجات کی مد میں صوبہ کو مرکز سے خطیر رقم ملنے کا امکان ہے، 22 ارب روپے بجلی منافع کے پچھلے سال کے بقایا جات کی مد میں ملیں گے، صوبائی ترقیاتی پروگرام کے تحت ترقیاتی کاموں کے لئے 122 ارب روپے فراہم کیے جائیں گے، صحت انصاف کارڈ کو صوبہ بھر بشمول قبائلی اضلاع تک توسیع دینے کی تجویز، ہیلتھ کے 115 ترقیاتی منصوبوں کے لئے 11 ارب 69 کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز ہے۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں