کے پی کے حکومت نے 2جولائی کو ہونے والے انتخابات ملتوی کرنے کی استدعا کر دی

اسلام آباد(فوزیہ چوہدری) سابق فاٹا میں امن و امان کی صورتحال مناسب نہیں، انتخابات بیس روز کے لئے ملتوی کئے جائیں۔ خیبرپختونخوا حکومت کا بھیجا خط الیکشن کمیشن کو موصول ہو گیا۔

 

الیکشن کمیشن کو موصول خیبرپختونخوا حکومت کے خط میں مطابق قبائلی اضلاع میں امن و امان کی مخدوش صورتحال کا ذکر کیا گیا ہے۔ محکمہ داخلہ خیبر پختونخوا نے دو جولائی کو ہونے والے انتخابات پچیس جولائی تک ملتوی کرنے کی استدعا کر دی ہے۔ خط میں لکھا ہے کہ نئے ضم شدہ اضلاع میں انتخابات کو سبوتاژ کرنے کے خطرات موجود ہیں اور افغانستان سے دہشت گردی کی کارروائیوں کا خطرہ ہے۔

 

خط میں خدشے کا اظہار کیا گیا ہے کہ سیاسی قیادت کو بھی نشانہ بنایا جاسکتا ہے۔ خط میں استدعا کی گئی ہے کہ شمالی وزیرستان میں حالیہ واقعات کے باعث بھی انتخابات ملتوی کیے جائیں۔ سیکریٹری الیکشن کمیشن کو لکھے گئے خط کو شعبہ قانون سازی میں غور کرنے کے لیے بھیج دیا گیا ہے، سابقہ فاٹا میں انتخابات ملتوی کرنے فیصلہ چیف الیکشن کمشنر اور سیکریٹری الیکشن کمیشن باہمی مشاورت سے کریں گے۔ صوبائی اسمبلی کی سولہ جنرل نشستوں دو جولائی کو ضم شدہ اضلاع میں انتخابات ہونے ہیں۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں