ملک میں جمہوریت کے نام پر آمریت مسلط ہے: خورشید شاہ

کراچی (پبلک نیوز) پیپلز پارٹی کے سینیر رہنماء خورشید شاہ نے کہا ہے کہ قانون کسی پارٹی کے لیے نہیں ملک کے لیے ہوتا ہے۔ چاہتے ہیں مل بیٹھ کر ملک کے لیے قانون سازی کریں۔

 

شہر قائد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماء خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ملک میں جمہوریت نام کی چیز نظر نہیں آتی۔ بغیر کسی وجہ کے جس کو مرضی پکڑ کر جیل میں ڈال دیا جاتا ہے۔ جمہوریت کا نام ہے مگر ملک میں آمریت مسلط ہے۔ آغا سراج اس اسمبلی کا اسپیکر ہے جس نے پاکستان کی قرارداد پاس کی۔ پیپلز پارٹی نے جمہوریت اور عوام کے حقوق کے لیے کوششیں کیں۔

 

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ملک میں اس وقت مہنگائی کا عذاب ہے۔ قانون کسی پارٹی کے لیے نہیں ملک کے لیے ہوتا ہے۔ چاہتے ہیں مل بیٹھ کر ملک کے لیے قانون سازی کریں۔ حکومت نام لے این آر او کس نے مانگا ہے۔ پیٹرول، بجلی، گیس کی قیمتوں میں راتو رات اضافہ کر دیا گیا۔ ایک کروڑ نوکریاں اور 50 لاکھ گھروں کی بات کی لیکن کوئی پلاننگ نظر نہیں آئی۔ حکومت ہمیں قرضوں کے بوجھ تلے نہ دبائے۔

حارث افضل  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں