چوہدری شوگر ملز کیس میں مریم نواز کو ضمانت پر رہائی مل گئی

لاہور(پبلک نیوز) چوہدری شوگر ملز کیس میں رہنماء مسلم لیگ ن مریم نواز کو ضمانت پر رہائی مل گئی، لاہور ہائی کورٹ کے 2 رکنی بنچ نے درخواست ضمانت پر فیصلہ سنایا، عدالت نے مریم نواز کے خاتون ہونے کی استدعا پر ضمانت منظور کرنے سے اتفاق کیا۔

 

شریف فیملی کو ایک اور بڑا ریلیف مل گیا، چوہدری شوگر ملز کیس میں مریم نواز کو ضمانت پر رہائی مل گئی۔ لاہور ہائیکورٹ کے دو رکنی بنچ نے درخواست ضمانت پر محفوظ فیصلہ سنایا۔ مریم نواز کی ضمانت پر رہائی کا تحریری فیصلہ 24 صفحات پر مشتمل ہے۔ فیصلے میں کہا گیا کہ عدالت نے مریم نواز کے خاتون ہونے کی استدعا پر ضمانت منظور کرنے سے اتفاق کیا۔ مریم نواز کبھی مفرور ہوئیں نہ انہوں نے قانون کی راہ میں کوئی رکاوٹ پیدا کی۔عدالت کے فیصلے میں کہا گیا کہ یہ سچ ہے کہ معاشرے میں کرپشن اور کرپٹ پریکٹس پھیلی ہوئی ہے۔ کرپشن سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کی ضرورت ہے۔ عدالت قانونی نکات کو مدنظر رکھتے اپنی آنکھیں نہیں موند سکتی۔

لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے میں کہا گیا کہ گرفتاری کو سزاء کے طور پر استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ عدالت ثبوتوں کے معاملے میں ٹرائل کورٹ کے دائرہ اختیار میں مداخلت نہیں کر سکتی۔ فیصلے کے مطابق ٹرائل کورٹ 2 متوازی قوانین کے اطلاق کے بارے فیصلہ کرے گی۔ پراسکیوشن کا مدعا نہیں تھا کہ یہ رقم غیر قانونی طور پر آئی۔ نصیر عبداللہ لوتھا کا پیش کیا گیا، بیان وزارت خارجہ سے تصدیق شدہ نہیں تھا۔ نصیر عبداللہ لوتھا کے بیان کے دوران ملزم کا موقف نہیں جانا گیا۔ چودھری شوگر ملز میں دیگر غیر ملکیوں کے بیانات تاحال ریکارڈ نہیں کئے گئے۔

 

لاہور ہائیکورٹ نے مریم نواز کی ضمانت منظور کرتے ہوئے ایک، ایک کروڑ کے دو ضمانتی مچلکے اور 7 کروڑ روپے بطور زرضمانت جمع کرانے کا بھی حکم دیا۔ بیرون ملک فرار ہونے کے نیب کے خدشے پیش پاسپورٹ بھی جمع کرانے کا حکم دیا۔ دوسری جانب نیب نے مریم نواز کی ضمانت چیلنج کرنے کا فیصلہ کر لیا، نیب لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرے گا۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں