لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت میں17اپریل تک توسیع کر دی

لاہور(پبلک نیوز)لاہور ہائیکورٹ نے اپوزیشن لیڈر اور مسلم لیگ ن کے رہںماء حمزہ شہباز شریف کی عبوری ضمانت کی درخواست منظور کر لی، حمزہ شہباز کو ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کروانے کی ہدایت کرتے ہوئے 17 اپریل تک توسیع کر دی۔

 

اپوزیشن لیڈر اور مسلم لیگ ن کے رہںماء حمزہ شہباز شریف کی عبوری ضمانت کیلئے دائر درخواست پر سماعت، درخواست پر سماعت لاہور ہائیکورٹ کے دو رکنی بینچ نے کی، عدالت نے نیب سے استفسار کیا کہ نیب بتائے کس کیس میں گرفتار کرنا ہے، نیب پراسیکیوٹر کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کے تین کیسز ہیں جو کہ لاہور نیب میں زیر تحقیقات ہیں۔ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتاری چاہتے ہیں، نیب کے پاس ٹھوس مٹریل موجود ہے، جس پر تحقیقات کرنی ہے۔

 

لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کے وکیل اعظم نذیر سے استفسار کیا کہ آپ کا وکالت نامہ جمع نہیں ہوا ہے، جس پر اعظم نذیر نے جواب دیا۔ انہوں نے کہا کہ آج ہی باہر سے واپس آیا ہوں، وکالت نامہ جمع نہیں کر وا سکا۔ عدالت میں دلائل دیتے ہوئے وکیل نے کہا کہ عدالت نے گرفتاری سے پہلے حمزہ شہبازشریف کو نوٹس جاری کرنے کا حکم جاری کیا تھا۔حمزہ شہباز اپوزیشن لیڈر ہیں ایسا سلوک مناسب نہیں ہے۔

 

نیب پراسیکیوٹر نے مؤقف اختیار کیا کہ سپریم کورٹ نے واضح کیا ہے کہ 10 روز پہلے نوٹس دینا لازمی نہیں۔ جسٹس شہزاد نے ریمارکس دیئے کہ ہمارے لیے سپریم کورٹ کا فیصلہ قابل احترام ہے۔ کیا ہم نے جو 10 دن کا فیصلہ تھا اسے نیب نے چیلنج کیا؟ نیب پراسیکیوٹر نے جواب میں کہا کہ ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل فائل کی جاچکی ہے، جس پر عدالت نے ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کروانے کی ہدایت کرتے ہوئے 17 اپریل تک توسیع کر دی۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں