لاہور ہائیکورٹ : حمزہ شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں 22 مئی تک توسیع


لاہور(ادریس شیخ) مسلم لیگ ن کے رہنماء حمزہ شہباز شریف ایک بار پھر گرفتاری سے بچ گئے، لاہور ہائی کورٹ نے 22 مئی تک عبوری ضمانت میں توسیع کر دی۔ نیب نے عدالتی حکم پر گرفتاری کی وجوہات سے متعلق دستاویزات حمزہ شہباز کو فراہم کر دیں۔

 

آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سماعت، جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے حمزہ شہباز کی درخواست ضمانتوں پر سماعت کی۔ حمزہ شہباز رمضان شوگر مل ریفرنس، صاف پانی اور اثاثہ جات کی انکوائری میں اپنی ضمانت میں توسیع کیلئے عدالت میں پیش ہوئے۔ وکیل حمزہ شہباز شریف نے کہا کہ نیب کو ہم سے خاص محبت ہے، نیب گرفتاری کی وجوہات سے آگاہ نہیں کر رہا اور مسلسل گھروں پر چھاپے مار کر ہراساں کر رہی ہے۔

 

نیب پراسیکیوٹر نے جس پر حمزہ شہباز شریف کی گرفتاری کی وجوہات سے متعلق دستاویزات عدالت کو پیش کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ حمزہ شہباز شریف کی درخواست پر بعض دستاویزات کی نقول انہیں فراہم کی گئیں، اینٹی منی لانڈرنگ قانون کے تحت تمام دستاویزات حمزہ شہباز شریف کو فراہم نہیں کی جا سکتیں۔ ڈی جی نیب کے خلاف حمزہ شہباز کی جانب سے توہین عدالت کی درخواست ہر نیب نے جواب عدالت میں جمع کرا دیا، جس پر عدالت نے حمزہ شہباز کی ضمانت میں 22 مئی تک توسیع کرتے ہوئے وکلاء کو بحث کیلئے طلب کر لیا۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں